نیب:شہباز شریف کے چہیتے بیوروکریٹس کیخلاف تحقیقات شروع

لاہور(احمد یٰسین)قومی احتساب بیورو نے وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کے قریب سمجھے جانے والے بیوروکریٹس کیخلاف تحقیقات شروع کردی ہیں۔ نیب کے راڈارمیں آنیوالوں میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری عمر رسول‘ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی نورالامین مینگل‘ سیکرٹری ہیلتھ نجم شاہ‘ کمشنر فیصل آبادمومن آغا‘ سیکرٹری لائیو سٹاک نسیم صادق‘ سی ای او دانش سکولز عامر حفیظ‘ سیکرٹری سکولز ایجوکیشن اللہ بخش‘ سیکرٹری کوآپریٹو شہریار سلطان‘ ڈی جی فیصل آباد ڈویلپمنٹ اتھارٹی یاور حسین‘عبداللہ سنبل‘ اعظم سلیمان‘راؤ محمد اسلم‘ ندیم محبوب ‘ احمد رجوانہ اور متعدد دیگر اعلیٰ افسران شامل ہیں۔ ذرائع کے مطابق نیب کے راڈار میں آنیوالے افسران کے محکموں کے ہائی پروفائل کیس قومی احتساب بیورو میں زیر تفتیش ہیں۔ نیب نے ان کیسز کی تحقیقات تیز کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور ساتھ ہی ان میں ملوث افسران اور ڈیپارٹمنٹس کے ہیڈز کو حراست میں لینے پر بھی غور کیا جا رہا ہے۔ ذرائع کے مطابق نیب اپنی تحقیقات کا دائرہ کار مزید بڑھا رہا ہے ۔ نیب کے راڈار میں آنیوالے افسران کے محکموں کے مزید معاملات بھی سامنے لانے کا فیصلہ کیا گیاہے۔ذرائع کے مطابق ان افسران کے کرپشن میں ملوث ہونے کی شکایات ہیں۔ ان کے موجودہ اور سابق محکموں میں کرپشن کی شکایات پر نیب میں پہلے ہی تحقیقات جاری ہیں۔ ان تحقیقات میں ہی بیوروکریٹس کو شامل کیا جا رہا ہے اور تحقیقات کا دائرہ ان کی ذاتی کرپشن تک بھی بڑھانے کی توقع ہے۔نیب راڈار میں آنیوالوں کے غیرملکی اکاؤنٹس‘ بیرونی دوروں‘ اندرون ملک پراپرٹی ‘ لائف سٹائل اور دیگر معاملات بارے بھی تحقیقات کی جائیں گی۔

Related posts