پنجاب کے 80فیصد گارڈز کی سکیورٹی کلیئرنس نہ ہوسکی


لاہور (نیوزلائن)پنجاب کے 80فیصدرجسٹرڈ سکیورٹی گارڈزکی سکیورٹی کلیئرنس نہ ہو سکی۔سکیورٹی کلیئرنس کے بغیر ہی گارڈز بنکوں‘ پرائیویٹ اداروں‘ یونیورسٹیوں‘ کالجوں‘ ہسپتالوں‘ رہائشی کالونیوں‘ پبلک مقامات پر ڈیوٹیاں کررہے ہیں جو کسی بھی وقت کسی بڑے سانحے کا باعث بن سکتے ہیں۔نیوزلائن کے مطابق پنجاب میں 311رجسٹرڈسکیورٹی کمپنیاں ہیں جنہوں نے 30ہزار 244گارڈز کی رجسٹریشن کروا رکھی ہے۔ پنجاب حکومت نے سکیورٹی کمپنیوں کو اپنے گارڈز کی سکیوری کلیئرنس کروانے کے احکامات جاری کئے تھے تاکہ گارڈز کے مجرمانہ ریکارڈ اور دہشت گردی کے واقعات میں ملوث ہونے کے خدشات کم ہوسکیں مگر ابھی تک صوبے کے 80فیصد گارڈز کی سکیورٹی کلیئرنس نہیں کروائی گئی۔ ایک رپورٹ میں سامنے آیا ہے کہ پنجاب کی 311رجسٹرڈ سکیورٹی کمپنیوں کے صرف چار ہزار کے لگ بھگ گارڈز کی سکیورٹی کلیئرنس ہوئی ہے۔اور ساڑھے 26ہزارگارڈز کی سکیورٹی کلیئرنس نہیں ہو سکی ۔سکیورٹی کلیئرنس کے بغیر بنکوں‘ پرائیویٹ اداروں‘ یونیورسٹیوں‘ کالجوں‘ ہسپتالوں‘ رہائشی کالونیوں‘ پبلک مقامات پر تعینات سکیورٹی گارڈز کسی بھی وقت کسی بڑے سانحے کا باعث بن سکتے ہیں۔

Related posts