الیکشن کمیشن نے 284سیاسی جماعتوں کی رجسٹریشن منسوخ کی


اسلام آباد(احمد یٰسین)الیکشن کمیشن آف پاکستان نے قوانین کی خلاف ورزی کرنے پر 284سیاسی جماعتوں کی رجسٹریشن منسوخ کردی۔ان پارٹیوں کو اپیل کا حق دیا گیا تھا مگر کسی ایک بھی جماعت نے اپیل نہیں کی۔ رجسٹریشن منسوخ کی جانیوالی پارٹیوں کو ملک بھر میں سیاسی سرگرمیاں کرنے کی ااجازت نہیں ہوگی۔ نیوزلائن کے مطابق الیکشن کمیشن نے تمام سیاسی جماعتوں کیلئے لازمی قرار دیا تھا کہ وہ کم از کم اپنے دوہزار ممبران کی فہرست ‘ انکے شناختی کارڈ کی نقول سمیت الیکشن کمیشن میں جمع کروائیں۔ ساتھ میں دو لاکھ روپے رجسٹریشن فیس بھی جمع کروائی جائے۔الیکشن کمیشن میں رجسٹرڈ354سیاسی جماعتوں میں سے صرف 70پارٹیوں نے مطلوبہ شرط پوری کی۔ 284سیاسی جماعتوں نے الیکشن کمیشن کی ان ہدایات کو درخور اعتنا نہ سمجھا۔ جس پر الیکشن کمیشن نے ان کی رجسٹریشن منسوخ کردی۔ ان جماعتوں کو پاکستان بھر میں سیاسی سرگرمیاں کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔جن پارٹیوں کی رجسٹریشن منسوخ کی گئی ہے ان میں پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز پیٹریاٹ‘ ناہید خان کی پاکستان پیپلز پارٹی ورکرز‘ پاکستان علماء کونسل‘ پاسبان ‘ متحدہ مجلس عامل پاکستان ‘ عام آدمی پارٹی پاکستان‘ آپ جناب سرکار پارٹی ‘ عام عوام پارٹی‘ آل پاکستان سنی تحریک‘ عام آدمی پارٹی‘ عوام لیگ‘عوامی راج پارٹی‘ کمیونسٹ پارٹی آف پاکستان‘ غریب عوام پارٹی‘ جمعیت علمائے پاکستان کے 6گروپ ‘ جمعیت علمائے اسلام (س)‘ سابق صدر مملکت فاروق لغاری کی ملت پارٹی‘پاکستان غریب پارٹی‘ پاکستان ملت پارٹی‘ پاکستان مسلم لیگ کے گیارہ گروپ‘ اور متعدد دیگر جماعتیں شامل ہیں۔ذرائع کے مطابق مسلم لیگ فنکشنل کا نام بھی اس لسٹ میں شامل تھا مگر اس نے اپیل کرکے اور مطلوبہ شرائط پوری کرکے رجسٹریشن بحال کرلی۔

Related posts