نئی حلقہ بندیوں پرملک بھر سے 542 اعتراضات جمع


اسلام آباد(احمد یٰسین)نئی حلقہ بندیوں پر اعتراجات کی بھرمار ہو گئی ۔ ملک بھر سے 542اعتراضات جمع ہوئے ۔ قومی اسمبلی کے حلقوں کی نسبت صوبائی اسمبلیوں پر اعتراضات زیادہ رہے۔ سب سے زیادہ اعتراضات پنجاب میں ہوئے جبکہ بلوچستان میں سب سے کم اعتراضات جمع کروائے گئے۔ نیوزلائن کے مطابق نئی حلقہ بندیوں پر اعتراضات بہت بڑی تعداد میں جمع کروائے گئے ہیں مگر ماہرین ان میں سے بہت بڑی تعداد میں اعتراضات کو قواعد کے مطابق قرار نہیں دے رہے۔الیکشن کمیشن کے ذرائع کے مطابق نئی حلقہ بندیوں پر ملک بھر سے 542اعتراضات جمع ہوئے ہیں جن کی سماعت شروع کردی گئی ہے اور الیکشن کمیشن نے اعتراضات جمع کروانے والوں کو طلب کرلیا ہے۔ سب سے زیادہ حلقوں کے حامل صوبے پنجاب سے اعتراضات بھی سب سے زیادہ جمع ہوئے ہیں۔پنجاب سے 242‘ سندھ سے 169‘ کے پی کے سے 61‘ بلوچستان سے 61‘ اسلام آباد سے پانچ اور فاٹا سے چار اعتراضات جمع کروائے گئے ہیں۔ملک بھر میں سب سے زیادہ39 اعتراضات پنجاب کے ضلع قصور میں جمع ہوئے جبکہ رحیم یار خاں میں 27اعتراضات جمع کروائے گئے۔

Related posts