نیشنل ہسپتال فیصل آباد بھی ٹیکس چوروں کی لسٹ میں شامل


فیصل آباد(احمد یٰسین)اپنے تائیں خدمت خلق کا تاثر دینے مگر عوام کو لوٹنے والا پرائیویٹ ہسپتال ’’نیشنل ہسپتال فیصل آباد‘‘ ٹیکس چوری میں ملوث نکلا۔ نیشنل ہسپتال کی 84لاکھ 45ہزار روپے کی ٹیکس چوری پکڑ کر ایف بی آر نے وصولی کیلئے نوٹس بھی جاری کر رکھے ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق نیشنل ہسپتال کے اپنی آمدن و اخراجات کے جمع کروائے گئے گوشواروں کا جائزہ لینے پر ایف بی آر حکام پر انکشاف ہوا کہ ہسپتال کے مالکان ٹیکس چوری میں ملوث ہیں۔ ایف بی آر نے ان کے گوشواروں کا تفصیلی معائینہ کیا تو سامنے آیا کہ نیشنل ہسپتال چلانے والا ٹرسٹ ’’نیشنل پبلک ویلفیئر سوسائٹی ‘‘ لاکھوں روپے کی ٹیکس چوری میں ملوث ہے۔ایف بی آر کی دستاویزات کے مطابق نیشنل ہسپتال نے 84لاکھ 45ہزار روپے کی ٹیکس چوری کی۔ جس پر ٹیکس ادائیگی کیلئے ایف بی آر نے نوٹس جاری کر دئیے۔ قوم کا درد دل رکھنے کے دعویداروں نے نوٹس ملنے کے باوجود ٹیکس ادائیگی کرنے کی بجائے تاخیری حربے استعمال کرنا شروع کر دئیے اور کمشنر ان لینڈ ریونیو سے حکم امتناعی لے کر معاملے پر کارروائی وقتی طور پر رکوا لی۔ ایف بی آر ذرائع کے مطابق حکم امتناعی اور اپیل کیلئے بھی ضروری ہے کہ نیشنل ہسپتال کی انتظامیہ 25فیصد ادائیگی کرے تاہم انہوں نے چوتھائی رقم بھی ادا نہیں کی اور اپنا اثرورسوخ استعمال کرکے بغیر ادائیگی کے ہی حکم امتناعی لینے میں کامیاب ہیں۔نیشنل ہسپتال کی انتظامیہ کیخلاف اس سے قبل ڈی سی او فیصل آباد بھی غیرقانونی کاموں پر کارروائی کرچکے ہیں۔ ہسپتال کی زمین کا غلط استعمال کرنے اور ٹرسٹ کے نام پر ہسپتال کو پرائیویٹ ہسپتال کے طور پر چلانے اور ٹرسٹ ایکٹ کی خلاف ورزیوں پر ڈی سی او فیصل آباد نے انکوائری کروائی جس میں الزامات ثابت ہوئے تھے اور ڈی سی او نے وہاں ایڈمنسٹریٹرتعینات کردیا تھا۔

Related posts