ایس پی ایڈمن کی ’’ہٹ دھرمی ‘‘غریب حوالدار کی جان لے گئی


فیصل آباد(نیوزلائن)فیصل آباد کے ایس پی ایڈمن ‘ ڈی ایس پی ہیڈکوارٹر اور دیگر اعلیٰ افسران کی ہٹ دھرمی اور سخت گیری کی وجہ سے دل کے مرض میں مبتلا حوالدار جان کی بازی ہار گیا۔ نیوزلائن کے مطابق فیصل آباد پولیس کا ہیڈکانسٹیبل زاہد حسین طویل عرصہ سے دل کے مرض میں مبتلا تھا اور ڈاکٹرز اسے فیلڈ ڈیوٹی کیلئے’’ ان فٹ‘‘ قرار دے چکے تھے ۔فیصل آباد پولیس کے اعلیٰ افسران نے ہیڈکانسٹیبل کی انجیوگرافی اوردل کی شریانوں میں سٹنٹ ڈالے جانے بارے آگاہی ہونے کے باوجودفیصل آباد سے پنجاب کانسٹیبلری فاروق آبادبجھوادیا۔ جہاں ڈاکٹرز نے میڈیکل گراونڈ پر اسے واپس فیصل آباد ضلع پولیس بجھوادیا۔ ڈاکٹرز نے دل کے عارضے میں مبتلا حوالدار سے فیلڈ ڈیوٹی نہ لینے کی بھی سفارش کی مگرپولیس دفاتر پر قابض مافیا اور اعلیٰ افسران نے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس کانام سپیشل پروٹیکشن یونٹ میں جانیوالے ملازمین کی فہرست میں ڈال دیا۔ایس پی یو میں حوالدار زاہد حسین کئی ماہ سے حساس نوعیت کی فیلڈڈیوٹی سرانجام دینے پر مجبورتھا۔ گرمی کی شدت سے حالت غیر ہونے کے سبب زاہد نے افسران کوکئی درخواستیں ارسال کیں اور سپیشل پروٹیکشن یونٹ سے واپسی کی استدعا کی مگر افسران نے ہٹ دھرمی اور سخت گیری کا مظاہرہ کیا ۔ جبکہ دفاتر پر قابض مافیا نے بھی اس کی واپسی یقینی بنانے کیلئے کوئی اقدام نہ اٹھایا۔اعلیٰ افسران کو درخواستیں ارسال کرتے کرتے دل کی بیماری کے سامنے زاہدحسین کی کچھ نہ چلی اور وہ شدید بیماری کے عالم میں فیلڈ ڈیوٹی سرانجام دیتا ہوا اچانک دل کا دورہ پڑنے سے موت کامسافر بن گیا۔

Related posts