عمران خان کا گورنرپختونخوا کو ہٹانے کیلئے وزیراعظم کوخط


اسلام آباد (نیوزلائن)چیئرمین پاکستان تحریک انصاف نے مسلم لیگ (ن) کے گورنر خیبرپختونخوا کو فوری طور پر عہدے سے ہٹانے کیلئے نگران وزیراعظم جسٹس (ر) ناصر الملک کو خط لکھ دیا ۔پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین کی جانب سے وزیراعظم کے نام لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ ریاستی ڈھانچے میں 3 بڑی خامیوں کے باعث انتخابات کا شفاف انعقاد غیر یقینی ہے۔ عمران خان نے خط میں کہا ہے کہ گورنر خیبر پختونخوا اقبال ظفر جھگڑا کے پاس ابھی بھی فاٹا کے مالیاتی اور انتظامی اختیارات موجود ہیں۔ گورنر کا تعلق مسلم لیگ (ن) سے ہے، وہ فاٹا اور خیبر پختونخوا کے سیاسی امور میں مداخلت کررہے ہیں۔خط میں کہاگیا ہے کہ گورنر کا کردار متنازع ہے وہ ایک پارٹی کی حمایت کررہے ہیں۔انہوں نے میں نگران وزیراعظم سے مطالبہ کیا کہ گورنر کے پی کے کو فوری طور پر عہدے سے ہٹایا جائے اگر گورنر کو نہ ہٹایا گیا تو شفاف انتخابات پر سوالیہ نشان لگ جائے گا۔عمران خان نے خط میں لکھا کہ وفاقی حکومت کے ماتحت بیوروکریسی کو تاحال تبدیل نہیں کیا گیا، ابھی تک مسلم لیگ (ن) کے تعینات کردہ افسران عہدوں پر براجمان ہیں۔ یہ بیوروکریٹ آزادانہ انتخابات کی راہ میں رکاوٹ اور اثرانداز ہورہے ہیں۔ سندھ اور پنجاب میں ابھی تک پی پی اور (ن) لیگ کی تعینات کردہ انتظامیہ موجود ہے، یہ انتظامیہ (ن) لیگ اور پی پی کے امیدواروں کو سپورٹ کررہی ہے۔ نگران حکومت سست روی سے اپنے اختیارات استعمال کررہی ہے۔ ہم انتخابات کے انعقاد میں کوئی شک و شبہ نہیں چاہتے، نگران حکومت اس حوالے سے فوری کارروائی کرے۔عمران خان نے خط میں مزید لکھا ہے کہ امید ہے نگران حکومت شفاف انتخابات یقینی بنانے کے لیے ہماری درخواست پر غور کریگی۔

Related posts