نوازشریف اور شہباز شریف کے اختلافات میں شدت آگئی


اسلام آباد(حامدیٰسین) مسلم لیگ ن کے صدر میاں شہباز شریف سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کا بیانیہ اور حکمت عملی قبول کرنے کو تیار نہیں ہیں جبکہ دونوں کے مابین اختلافات پوائنٹ آف نو ریٹرن پر پہنچ چکے ہیں۔اختلافات میں شدت کی وجہ سے ملک بھرمیں مسلم لیگ ن کو نقصان پہنچ رہا ہے اور الیکشن میں ناقابل تلافی نقصان کا احتمال ہے۔نیوزلائن کے مطابق سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف فوج اور عدلیہ کیخلاف اپنے بیانئے سے پیچھے ہٹنے کیلئے تیار نہیں ہیں جس کی وجہ سے مسلم لیگ ن میں پھوٹ تیزی سے بڑھ رہی ہے۔ سیکنڈلائن کمانڈ تو ایک طرف رہی شریف فیملی میں بھی اس معاملے پر شدید اختلاف پایا جا رہا ہے۔ شریف فیملی کے قریبی ذرائع کے مطابق میاں نواز شریف نے پارٹی اور خاندان پر واضح کردیا ہے کہ وہ سیاسی زندگی کی آخری اننگز کھیل رہے ہیں ایسے میں کسی بھی صورت پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ مریم نواز بھی میاں نواز شریف کے مؤقف کی حامی ہیں اور عدلیہ کے فیصلوں اور اسٹیبلشمنٹ کے کھیل کے سامنے ڈٹ جانا چاہتی ہیں جبکہ میاں شہباز شریف اسٹیبلشمنٹ اور عدلیہ سے کسی صورت بگاڑنا نہیں چاہتے۔ وہ اسٹیبلشمنٹ کو خوش کرنے کی ہر ممکن کوشش کررہے ہیں مگر ناراض ’’دوست‘‘ ماننے کو نہیں آرہے۔

Related posts