مریم نواز کو سزا بوگس کاغذات عدالت میں جمع کروانے پر ہوئی




اسلام آباد(نیوزلائن)ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت نے سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کو مجموعی طور پر سات سال قید اور 20لاکھ پاؤنڈز جرمانے کی سزا سنائی ہے۔ احتساب عدالت کے فیصلے میں مریم نواز کوسنائی گئی سزا کا سب سے اہم پہلو یہ ہے کہ مریم کو براہ راست کرپشن کرنے اور غیرقانونی اثاثہ جات بنانے کا مجرم قرار دنہیں دیا گیا۔ احتساب عدالت کے فیصلے میں واضح کیا گیا ہے کہ مریم نواز نے عدالت میں بوگس دستاویزات جمع کروائیں۔ مریم نواز نے ایک خط پیش کیا جو کہ بوگس تھا۔ مریم نواز کی ایون فیلڈ فلیٹس بارے جمع کروائی گئی ٹرسٹ ڈیڈ بوگس نکلی۔ عدالت میں جمع کروایا گیا ایک خط بھی بوگس نکلا۔ مریم نواز کی پیش کی گئی دستاویزات ٹمپرنگ شدہ نکلیں۔ احتساب عدالت نے مریم نواز کے حوالے سے تمام حالات فیصلے میں لکھے ہیں ساتھ ہی یہ بھی واضح کیا ہے کہ عوامی عہدہ رکھنے والے میاں نواز شریف کی آمدن سے زائد اثاثے بنانے اور اس جرم کو چھپانے کی کوشش میں بھی مریم نواز اپنے والد کی ممدومعاون بنتی رہیں۔ عدالت نے انہیں سزا بھی اسی جرم کی سنائی ہے۔

Related posts