جمعہ کو پاکستان واپسی: روک سکو تو روک لو‘ مریم نواز


لندن (نیوزلائن) سابق وزیراعظم محمد نواز شریف کی صاحبزادی اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز نے کہا ہے کہ کرپشن اور منی لانڈرنگ کا کوئی الزام محمد نواز شریف پر ثابت نہیں ہوسکا مگر اس کے باوجود سزا دے دی گئی، پورا فیصلہ مفروضات پر دیا گیا ہے،ریڈوارنٹس ڈکٹیٹر کیلئے سنبھال کر رکھے جائیں، جمعہ کو میں اور محمد نواز شریف پاکستان واپس آئیں گے، کارکن انتخابات کی تیاری کریں ۔ لندن میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم محمد نواز شریف کی صاحبزادی اور مسلم لیگ (ن) کی رہنماء مریم نواز نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے قائد محمد نواز شریف کو منی لانڈرنگ کے الزامات سے بری کر دیا گیا ہے کیونکہ ان پر کرپشن اور منی لانڈرنگ کا کوئی الزام ثابت نہیں ہوسکا۔ انہوں نے کہا کہ فیصلے میں یہ لکھا گیاہے کہ محمد نواز شریف نے کوئی کرپشن نہیں کی اور نہ ہی کرپشن کا کوئی ثبوت ملا مگر اس کے باوجود ان کو سزا دے دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ محمد نواز شریف کا احتساب پرویز مشرف کے دور میں بھی ہوا لیکن پرویز مشرف بھی محمد نواز شریف کیخلاف کچھ ثابت نہیں کر سکے۔ انہوں نے کہا کہ پورا فیصلہ مفروضات پر دیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ٹرسٹ ڈیڈ میرے اور میرے بھائی کے درمیان تھی جس سے کسی تیسرے فریق کا نہ تو کوئی نقصان ہوا اور نہ ہی کسی تیسرے فریق کا کوئی تعلق ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں اور میرا بھائی آج بھی اس ٹرسٹ ڈیڈ کو تسلیم کرتے ہیں اور برطانیہ جہاں یہ ٹرسٹ ڈیڈ ہوئی جب وہ اسے درست قرار دے رہے ہیں تو پھر کوئی اور اسے کیسے غلط قرار دے سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں ریڈ وارنٹس کے حوالے سے خبریں دیکھ رہی ہوں ، میں کہتی ہوں کہ ان ریڈ وارنٹس کو اپنے پاس ڈکٹیٹر کیلئے سنبھال کر رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ پہلے ہمارا فیصلہ تھا کہ والدہ کے ہوش میں آنے تک واپس نہیں آئینگے مگر ڈاکٹرز نے اب امید دلائی ہے کہ آئندہ چند روز میں میری والدہ کو ہوش آ جائیگا اس لئے میں اور محمد نواز شریف جمعہ کو وطن واپس آ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ابھی تو میں جیل جاؤں گی، کا رکن انتخابات کی تیاری کریں کیونکہ 25 جولائی کو عوامی عدالت لگے گی۔

Related posts