صحافت کا لاشہ : میاں محمد ندیم

صحافت کی آزادی اسی وقت ”خطرے“میں پڑتی ہے جب سیٹھ کے مفاد کو خطرات لاحق ہوں یا کسی بڑے”گروہ“کا کارندہ نشانے پر آجائے -ورکرکوذلیل کیا جائے‘اس کی تنخواہ روکی جائے‘وہ معاشی دہشت گردی کا شکار ہوکسی کے کان پر جوں تک نہیں رینگتی-سیٹھ نے ٹریڈیونین میں دھڑے بندیاں کرواکر ایسا مارا ہے کہ لوگوں کے حقوق کی بات کرنے والا کارکن صحافی زندہ درگور ہوگیا ہے-تیئس برس کی خواری کا نچوڑ ہے کہ آزادی صحافت‘آزادی اظہار رائے سب فراڈ ہے -یہ موم کی ناک ہے سیٹھ مافیا جس طرف چاہے…

Read More

پاکستانی میڈیا کیلئے نیا چیلنج : اینکروکریسی

اسلام آباد(رانا حامد یٰسین)پاکستان میں میڈیا کی ترقی کیساتھ ایک نئی قوت ”اینکرز“ ابھر کر سامنے آئی اور دیکھتے ہی دیکھتے میڈیا پر چھا گئی۔خود کو ہر اخلاقیات سے بالا سمجھنے والے اینکرز نے طاقت ور بیورو کریسی کی طرز پر ”اینکروکریسی“کو جنم دیا اور میڈیا پاور کو استعمال کرکے معاشرے کی اخلاقی روایات‘ سیاسی و سماجی اقدار اور صحافتی اخلاقیات کو روند ڈالا۔ آج پاکستانی میڈیا پرصحافیوں‘ ایڈیٹرز‘ ڈائریکٹرز نیوز کی بجائے ”اینکروکریسی“کا کنٹرول ہے جو صحافتی اقدار کو کسی خاطر میں لانے کو تیار نہیں۔پاکستانی اینکرز کی اکثریت…

Read More