انتظامی و پولیس افسران سیاسی سرگرمیوں میں ملوث ہونے لگے

فیصل آباد(احمد یٰسین) فیصل آباد کے انتظامی اور پولیس افسران کے سیاسی سرگرمیوں میں ملوث ہونے اور سیاسی تقاریب میں شامل ہونے کی رپورٹس سامنے آئی ہیں۔ سرکاری ملازمین پر سیاسی سرگرمیوں میں حصہ لینے کی پابندی کے باوجود مختلف محکموں کے افسران و اہلکاران کھلے عام قانون سے کھلواڑ کرکے سیاسی سرگرمیوں میں شامل ہورہے ہیں مگر کوئی ادارہ ان کیخلاف ایکشن لینے کو تیار نہیں ہے۔نیوز لائن کے مطابق فیصل آباد میں تعینات انتظامی اور پولیس افسران کے مختلف سیاسی سرگرمیوں مین شامل ہونے اور سیاسی تقاریب میں بطور مہمان خصوصی شرکت کرنے کی رپورٹس سامنے آئی ہیں۔ بیوروکریٹس سیاسی جماعتوں کی مختلف طرح کی امداد کرتے اور ان کی ساکھ کو بہتر کرنے یا خراب کرنے والی کارروائیوں میں بھی ملوث پائے جارہے ہیں۔ نیوز لائن کے مطابق سرکاری ملازمین کے سیاسی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کی بھرپور انداز میں مخالفت کرنیوالی پی ٹی آئی کی سرگرمیوںمیں بھی سرکاری ملازمین اور افسران ملوث پائے جارہے ہیں۔ پولیس افسران کی بڑی تعداد سیاسی پی ٹی آئی سمیت مختلف جماعتوں کی حمائت اور ان کی کارروائیوں کا حصہ بنتے پائے گئے ہیں۔ انتظامی افسران’ محکمہ تعلیم’ صحت’ واسا’ ایف ڈبلیو ایم سی’ پی ایچ اے’ واسا’ ریلوے ‘ بلدیات اور دیگر محکموں کے افسران و ملازمین بھی سیاسی سرگرمیوں میں ملوث پائے جارہے ہیں۔ ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی نے ماضی میں سرکاری ملازمین کے سیاسی سرگرمیوں میں ملوث ہونے مسلم لیگ ن ‘ پی پی پی ‘ مسلم لیگ ق اور دیگر جماعتوں کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے مگر اب جبکہ پی ٹی آئی اقتدار میں ہے تو سیاسی سرکاری ملازمین نے پی ٹی آئی کا رخ کرلیا ہے۔ سرکاری ملازمین کے سیاسی سرگرمیوں میں ملوث ہونے پر آئین اور سروس رولز کے تحت پابندی عائد ہے مگر اس کے باوجود سرکاری ملازمین قانون سے کھلا کھلواڑ کرکے سیاست میں حصہ لیتے اور مختلف سیاسی جماعتوں کی تقاریب میں شامل پائے جاتے ہیں۔پی ٹی آئی نے اس حوالے سے اعلانات تو بہت کئے مگر اقتدار کا ایک سال گزرنے کے باوجود اس کی طرف سے اس بارے میں کوئی مؤثر اقدام نظر نہیں آیا۔

Related posts