تبدیلی آگئی: سرکاری ادارے بھی ٹیکس چوری میں ملوث ہونے لگے

فیصل آباد (نیوز لائن) تبدیلی کے اثرات پرائیویٹ افراد اور نجی فرموں سرکاری محکموں اور اداروں پر بھی ہونے لگا ہے۔ پرائیویٹ افراد اور اداروں کے بعد سرکاری محکمے بھی فیڈرل بورڈ آف ریونیو کی ادائیگیاں روکنے اور ٹیکس چوری کرنے میں ملوث پائے جانے لگے۔ پنجاب حکومت کے بائیس محکمے ودہولڈنگ ٹیکس کی مد میں ایف بی آر کے ڈیفالٹر اور ٹیکس چوری مین ملوث پائے جا رہے ہیں۔ ان اداروں نے رواں مالی سال کے10ماہ گزرنے کے بعد بھی فیڈرل بورڈ آف ریونیو کو13روڑ65لاکھ51ہزار روپے مالیت کے زرکثیر ٹیکس کی ادائیگی نہیں کی۔ نادہندہ محکموں کومراسلے جاری کردیئے گئے ہیں ۔ نیوز لائن کے مطابق تمام سرکاری محکمے پابند ہیں کہ وہ مختلف نوعیت کی نجی فرموں کو سٹیشنری’پرچیز اور پروکیورمنٹ کی مد میں خریداری کے دوران فیڈرل بورڈ آف ریونیو کو ودہولڈنگ ٹیکس کی ادائیگی کریں لیکن سب رجسٹرار اربنIنے74.532 ملین روپے’ سب رجسٹرار جڑانوالہ26.906ملین روپے ‘سب رجسٹرار اربنIIفیصل آباد11.182 ملین روپے’سب رجسٹرار سٹی فیصل آباد5.318ملین روپے’ اسٹنٹ ڈائریکٹر لینڈ ریکارڈ جڑانوالہ3.845ملین روپے سب رجسٹرار سمندری2.361ملین روپے’تحصیلدار تاندلیانوالہ 1.491ملین روپے’سب رجسٹرار تاندلیانوالہ 0.71ملین روپے’ الائیڈ ہسپتال 1.640ملین روپے’گورنمنٹ کالج یونیورسٹی0.504ملین روپے’پراونشل ہائی وے 4.818 ملین روپے’ریذیڈنٹ انجینئر واپڈا0.441ملین روپے’ یونین کونسل30′ 0.127 ملین روپے’زونل منیجر اوقاف0.013ملین روپے’زرعی یونیورسٹی 0.710ملین روپے’ ایڈمنسٹریٹر لاری اڈا 0.220ملین روپے’ریذیڈنٹ انجینئر واپڈا 0.146 ‘ریذیڈنٹ انجینئر ٹرمینل0.031ملین روپے’ایم ایس چک جھمرہ0.064ملین روپے’ایم ایس تحصیل ہسپتال سمندری0.388 ملین روپے’ میونسپل کمیٹی جڑانوالہ 0.511ملین روپے ‘میونسپل کمیٹی چک جھمرہ0.235ملین روپے کی ادائیگیاں تاحال نہ کی ہیں۔ایف بی آر نے ٹیکس چوری میں ملوث ان اداروں کو نوٹس جاری کردئیے ہیں اور ادائیگیاں نہ کرنے ہر ان محکموں کے ذمہ داران کیخلاف کارروائی کرنے کا ندیہ دیا گیا ہے۔

Related posts