رانا ثناء اللہ کی گرفتاری کیخلاف پیپلزپارٹی کے رہنماؤں کا مذمتی بیان

فیصل آباد (نیوز لائن) رانا ثناء اللہ خاں کی گرفتاری حکومت کے سیاسی انتقام کی بدترین مثال ہے، حکمران مکمل طور پر بوکھلاہٹ کا شکار ہیں اور اپنی خفت مٹانے کی خاطر اپنے سیاسی مخالفین پر جھوٹے اور بے بنیاد مقدمات قائم کررہے ہیں۔ ریاست مدینہ طرز حکومت کے دعویدار انتقام میں اندھے ہو کر اسلامی شعار کا مذاق اڑا رہے ہیں۔ ہم مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر سابق وزیر قانون رانا ثناء اللہ کی گرفتار ی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلز پارٹی سٹی فیصل آباد کے صدر رانا نعیم دستگیر خاں‘ سنئیر نائب صدر شیخ محمد اسلام‘ انفرمیشن سیکرٹری خاور جاویدودیگرنے رانا ثناء اللہ خان کی گرفتاری پر اپنے تاثرات بیان کرتے ہوئے کیا۔ انہوں کہا کہ حکومت سیاسی و معاشی محاذ پر بری طرح فلاپ ہو چکی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ برسراقتدار طبقہ اپنی ناکامیوں کا سارا غصہ اپنے سیاسی حریفوں کو پابند سلاسل کرکے اتار رہا ہے۔ لیکن وہ یاد رکھیں کہ ایسی الٹی سیدھی حرکتوں سے ان کے لیے مذید پریشانیاں پیدا ہونگی۔انہوں کہا کہ کس قدر افسوس کا مقام ہے کہ حکمران ریاستی اداروں کا استعمال اپنے سیاسی مخالفین کو ہراساں کرنے کے لیے کر رہے ہیں، جس سے ناصرف ملک کے سیاسی اور سماجی حلقوں میں تشویش کی لہر پائی جارہی ہے وہاں عام شہری بھی اس سے نالاں نظر آ رہا ہے۔ انہوں مطالبہ کیا کہ محترمہ فریال تالپور‘ سابق صدر آصف علی زرداری سمیت تمام اپوزیشن رہنماوں کے خلاف سیاسی طورقائم کیے جانے والے مقدمات ختم کیے جائیں۔

Related posts