سابق صدر زرداری پکڑے گئے ‘ چند دن میں مزید گرفتاریوں کا امکان

اسلام آباد (احمد یٰسین) نیب نے سابق صدر مملکت آصف علی زرداری کو منی لانڈرنگ کیس میں گرفتار کرلیا ہے۔ جبکہ نیب کے ہاتھوں آئندہ چند دنوں میں اپوزیشن لیڈ ر میاں شہباز شریف’ حمزہ شہباز’ سابق وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ پرویز خٹک سمیت متعدد مزید گرفتاریاں ہونے کا اامکان ہے۔ نیوز لائن کے مطابق قومی احتساب بیورو نے پی پی پی پی کے چیئرمین اور سابق صدر مملکت آصف علی زرداری کو گرفتار کرلیا ہے۔ آصف علی زرداری کی درخواست ضمانت اسلام آباد ہائیکورٹ نے مسترد کردی تھی۔جس کے بعد چیئرمین نیب نے ان کے وارنٹ گرفتاری جاری کردئیے۔ نیب کی ٹیم وارنٹ لے کر زرداری ہاؤس گئی تو میڈیا کے نمائندے اور پیپلزپارٹی کے جیالوں کی بڑی بھی وہاں پہنچ گئی۔سی ای سی کی شیدول میٹنگ کی وجہ سے پی پی پی کے رہنماؤں کی بڑی تعداد بھی زرداری ہاؤس میں موجود تھی۔ نیب کی ٹیم کی آمد کی اطلاع ملنے پر انہیں زرداری ہاؤس میں اندر بلا لیا گیا۔ سابق صدر نے نیب ٹیم کے ساتھ جانے سے پہلے اپنے ساتھیوں سے مختصر مشاورت کی ۔ ان کی صاحبزادی آصفہ بھٹو نے انہیں گلے لگایا جبکہ بلاول بھٹو خود انہیں گاڑی میں بٹھانے آئے۔

بلاول بھٹو’ آصفہ بھٹو’ یوسف رضا گیلانی’ قمر الزماں کائرہ اور دیگر پی پی پی رہنماؤں نے مسکراتے ہوئے خوشگوار موڈ میں انہیں نیب کے ساتھ رخصت کیا۔ آصف زرداری کی گرفتاری پر وہاں موجود جیالوں نے احتجاج کیا مگر نیب کے ساتھ مزاحم نہ ہوئے ۔ گرفتاری کے بعد آصف زرداری کو نیب ہیڈ کوارٹر میں رکھا گیا۔ جبکہ ان کا طبی معائنہ بھی کروایا گیا۔ حیران کن طور پر آصف علی زرداری کی بہن اور منی لانڈرنگ کیس کی شریک ملزم فریال تالپور کو گرفتار نہیں کیا گیا جبکہ وہ بھی آصف زرداری کی گرفتاری کے وقت زرداری ہاؤس اسلام آباد میں موجود تھیں۔ ذرائع کے مطابق نیب نے اپنی کارروائیاں تیز کرنے کا فیصلہ کیا۔ امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ آئندہ چند دنوں میں قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف’ پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز’ پی ٹی آئی کے سابق وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ اور وزیر دفاع پرویز خٹک سمیت اہم شخصیات کو بھی حراست میں لے لیا جائے گا۔

Related posts