سیلزٹیکس چور 1632سرمایہ داروں کی لسٹیں تیار’ گرینڈ آپریشن کا حکم

فیصل آباد (احمد یٰسین) تحریک انصاف کی حکومت نے ملک بھر کے 1632بڑے سیلز ٹیکس چوروں کی لسٹیں تیار کر لی ہیں اور ان کے خلاف ایکشن کیلئے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے فیلڈ دفاتر کو احکا مات جاری کردئیے گئے ہیں۔ سیلز ٹیکس چوری میں ملوث سب سے زیادہ افراد اور کمپنیاں کراچی کی ہیں۔ دوسرے نمبر پرلاہور جبکہ تیسرے نمبر پر فیصل آباد کی 170کمپنیاں اور افراد سیلز ٹیکس چوری میں ملوث پائے جا رہے ہیں۔ نیوز لائن کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے جمع ہونیوالے ٹیکس ریٹرن ‘ خریداریوں اور فروخت کے حسابات ‘ بنک اکاؤنٹس کی جانچ پڑتال سے گزشتہ مال سال کے دوران سیلز ٹیکس چوری کرنے والی 1632 بڑی کمپنیوں کا سراغ لگا لیا ہے ۔ذرائع کے مطابق سیلز ٹیکس چوری میں ملوث یہ 1632یونٹ سالانہ 50ملین سے زائد کا ٹرن اوور رکھتے ہیں جبکہ ان کے علاوہ 37ہزار آٹھ سو ستاون ایسے سیلز ٹیکس چوروں کی لسٹیں بھی تیار کی گئی ہیں جن کا سالانہ ٹرن اوور پچاس ملین سے کم ہے۔ ایف بی آرکے ریکارڈ کے مطابق بڑے سیلز ٹیکس چور 1632 یونٹس نے ایک سال کے دوران سات کھرب’ 19ارب روپے سے زائد کی خرید و فروخت ایسی کی جس پر سیلز ٹیکس ادا نہیں کیا۔ جبکہ ان کی جمع کرائی گئی ٹیکس ریٹرن میں بھی گھپلے پائے گئے۔ زیرو ریٹ ٹیکس پالیسی کی بھی خلاف ورزی کی ۔ بوگس انوائسز بنوانے میں بھی ملوث رہیں۔ غیرقانونی کارروائیوں میں ملوث ہونے’ سیلز ٹیکس چوری کرنے والی ان 1632کمپنیوں کے کیسز تیار کرلئے گئے ہیں۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے بھی ان کیخلاف کارروائی کے احکامات جاری کردئیے ہیں۔ کارروائی کے احکامات متعلقہ فیلڈ دفاتر کر بھجوا دئیے گئے ہیں۔ ان افراد کیخلاف مقدمات کے اندراج سمیت ہر ممکن اقدام اٹھانے اور ان سے چوری کیا گیا سیلز ٹیکس وصول کرنے کی تیاری کی جارہی ہے۔سیلز ٹیکس چوری میں ملوث تمام یونٹس کی الگ الگ فائل تیار کی گئی ہے اور ہر کیس کو انفرادی طور پر ڈیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

Related posts