شہباز شریف کی ناقص حکمت عملی: الائیڈ ہسپتال مالی بحران کا شکار


فیصل آباد(ندیم جاوید) شہباز شریف حکومت کی ناقص حکمت عملی نے الائیڈ ہسپتال فیصل آباد کو شدید ترین مالی بحران کا شکار کردیا۔حکومتی فنڈز کی عدم فراہمی کے باعث ہسپتال کروڑوں روپے سے کا مقروض ہوچکاہے۔وارڈز میں مفت علاج تو ایک طرف ایمرجنسی میں بھی علاج معالجہ انتہائی مشکل اور او پی ڈی میں مریضوں کو ادویات کی فراہمی بری طرح متاثر ہونے کا خدشہ ہے ۔نیوزلائن کے مطابق شہباز شریف حکومت کی طرف سے عوام کو علاج معالجے کی سہولیات کی فراہمی میں عدم دلچسپی اور ناقص حکمت عملی کی وجہ سے الائیڈ ہسپتال فیصل آباد شدید ترین مالی بحران کا شکار ہو چکا ہے۔ ہسپتال انتظامیہ کیلئے انتظامی اور آپریشنل امور چلانا بھی دشوار ہو چکا ہے۔نیوزلائن کے مطابق ہسپتال کو مالی مشکلات کا سامنا گزشتہ چار ماہ سے کرنا پڑ رہا ہے ۔ہسپتال انتظامیہ کی طرف سے مالی اور آپریشنل مشکلات بارے آگاہ کرنے کے باوجود شہباز شریف حکومت نے عوام کو لاج معالجے کی سہولیات فراہم کرنے والے اس اہم ترین ادارے کو فنڈز کی فراہمی یقینی نہیں بنائی۔ فنڈز کی درخواست کرنے پرشہباز شریف حکومت کے ذمہ داران کی طرف سے ہسپتال انتظامیہ کو مارکیٹ سے ادھار ادویات حاصل کرنے کے کی ہدائت کی جاتی رہی۔ ہسپتال حکام کے مطابق الائیڈ ہسپتال کے اکاؤنٹس کئی ماہ سے خالی پڑے ہیں ۔ انتظامی اور آپریشنل امور’’ ڈنگ ٹپاؤ ‘‘پالیسی کے تحت چلائے جا رہے ہیں۔چار ماہ کے دوران ہسپتال انتظامیہ20کروڑ روپے سے زائد کی ادویات ادھار خرید چکی ہے جبکہ حکومت کی طرف سے فنڈز کی فراہمی ابھی تک ممکن نہیں ہو پائی۔ جس سے نیا بحران جنم لینے لگا ہے۔ میڈیسن سپلائرز مزید ادویات ادھار فراہمی سے انکاری ہیں۔ حکومت کی طرف سے فنڈز نہیں مل سکے۔ جو مریضوں کے علاج معالجے کی سہولیات پر اثر انداز ہونے کا خدشہ سر اٹھانے لگا ہے۔

Related posts