فیصل آباد میں ٹریفک وارڈن کے ظلم کا شکار رکشہ ڈرائیور خودکشی پر آمادہ

فیصل آباد (نیوز لائن) فیصل آباد میں ٹریفک وارڈن کے ظلم کے شکار رکشہ ڈرائیور نے اپنے ہی ہاتھوں اپنی زندگی کا خاتمہ کرنے کیلئے تیل چھڑک کر خود کو آگ لگا لی۔ تاہم وہاں موجود شہریوں نے اس کی زندگی بچا لی ۔ پولیس اور ٹریفک پولیس کے اعلیٰ حکام تفصیلات سے آگاہ ہونے کے باوجود ٹریفک وارڈن کے خلاف کارروائی سے گریزاں ہیں۔ تفصیل کے مطابق جنرل ہسپتال غلام محمد آباد کے قریب ڈیوٹی کرنے والے ٹریفک وارڈن نواز کے بارے میں سامنے آیا ہے کہ وہ وہاں موجود رکشہ ڈرائیوروں پر ظلم ڈھانے اور انہیں بلاوجہ تنگ کرکے ”افسری کا رعب جھاڑنے” میں مگن رہا تھا۔ رکشہ ڈرائیوروں نے متعدد مرتبہ اس کیخلاف اعلیٰ حکام کو شکایات بھی کیں مگر کوئی ایکشن نہ ہوسکا۔ ٹریفک وارڈ ن کے مسلسل ظلم اور بے جا چالانوں سے عاجز آکر رکشہ ڈرائیور محمد حسین نے کود پر تیل چھڑک کر آگ لگا لی تاہم ہسپتال کے سامنے موجود شہریوں نے فوری آگ بجھائی اور اس کی جان بچا لی۔ شہریوں نے ٹریفک وارڈن نواز کو پکڑ نے کی بھی کوشش کی مگر وہ وہاں سے رفو چکر ہو گیا۔

Related posts