فیصل آباد میں ڈیڑھ ہزار غیررجسٹرڈ ’’علم فروش‘‘مہنگے پرائیویٹ سکول


فیصل آباد (احمد یٰسین) فیصل آباد میں ڈیڑھ ہزار سے زائد غیررجسٹرڈ مہنگے پرائیویٹ سکولوں کی موجودگی کا انکشاف ہوا ہے۔ تعلیم عام کرنے کے کھوکھلے نعروں کے ساتھ بنے یہ ’’علم فروش‘‘ غیررجسٹرڈ مہنگے پرائیویٹ سکول بھاری فیسیں وصول کرتے ہیں اوران کے مالکان قانون سے کھلم کھلا کھلواڑ کررہے ہیں۔غیر قانونی نجی سکولوں کے بارے میں تمام تر معلومات ہونے کے باوجود ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی ان کے بااثر مالکان سے خوفزدہ ہوکر ان کیخلاف کوئی کارروائی کرنے سے گریزاں ہے۔ نیوزلائن کے مطابق فیصل آباد میں ڈیڑھ ہزار سے زائد غیررجسٹرڈ مہنگے پرائیویٹ سکول موجود ہیں ۔غیررجسٹرڈ پرائیویٹ سکولوں کیخلاف ایجوکیشن اتھارٹی کوئی کارروائی نہیں کررہی۔ ذرائع کے مطابق غیررجسٹرڈ سکولوں میں سے 90فیصد سے زائد سکول انتہائی مہنگے اور ان کی فیسیں ہزاروں میں ہیں۔ محکمہ تعلیم کے حکام چھوٹے پرائیویٹ سکولوں کو کبھی کبھار اپنے انتقام کا نشانہ بنا کر کاغذی کارروائیاں کرنے میں ہی مگن رہتی ہے جبکہ مہنگے غیررجسٹرڈ سکولوں کے مالکان کے اثرورسوخ سے خوفزدہ ہو کر سی ای او ایجوکیشن ‘ ڈی ای او ز‘ ڈی ڈی ای اوز اور دیگر حکام کوء کارروائی کرنے سے خوفزدہ رہتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق مہنگے غیر رجسٹرڈ سکولوں میں سے بڑی تعداد میں ایسے سکول بھی ہیں جو مختلف سرکاری محکموں کی سرپرستی میں چلائے جارہے ہیں۔ جبکہ سیاسی شخصیات کی بڑی تعداد بھی غیرقانونی پرائیویٹ سکول چلانے میں ملوث ہیں۔ این جی اوز اور سوسائٹیز بھی غیرقانونی پرائیویٹ سکول چلانے میں ملوث پائی جارہی ہیں۔ ذرائع کے مطابق غیررجسٹرڈ سکولوں کے بارے میں محکمہ تعلیم کے حکام کے پاس تمام معلومات موجود ہیں مگر ان کے بااثر مالکان سے خوفزدہ حکام کسی کارروائی سے گریزاں ہیں۔

Related posts