مرکزمیں حکومت مگر دربار بری امام پر حاضری نہیں‘ مشکلات تو آئیں گی


اسلام آباد(نیوزلائن)وفاق میں حکومت بنانے کے باوجود پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان نے دربار بری امام سرکار پر حاضری نہیں دی۔ چاہئے تو یہ تھا کہ اپنی حکومت کی خیروبرکت کیلئے عمران خان حکومت سازی کے بعد پوٹھوہار کی سب سے بڑی گدی پر حاضری سے آغازکرتے مگر انہوں نے دربار بری امام سرکار پر حاضری ہی نہیں دی جس کی وجہ سے ان کی حکومت کیلئے مشکلات پیدا ہورہی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار سجادہ نشین دربار بری امام سرکار پیر سید محمد علی گیلانی نے اپنے ایک بیان میں کیا۔ محترم پیر سید محمد علی گیلانی نے عمران خان کو مرکز میں حکومت بنانے پر مبارکباد پیش کی ۔ اور ان کیلئے نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔ ان کا کہناتھا کہ عمران خان سے قوم کو بہت توقعات ہیں۔ عمران خان کو قوم کی توقعات پر پورا اترنا ہوگا اس کیلئے انہیں انتھک محنت کرنا ہو گی۔ اور عوامی مسائل کے حل کیلئے اپنے تمام تر صلاحیتوں کیساتھ کام کرنا ہو گا۔ پیر سید محمد علی گیلانی کا کہنا ہے کہ عمران خان کو پوٹھوہار کی سب سے بڑی گدی پر فوری ھاضری دینا چاہئے اور اپنی حکومت کی خیروبرکت کیلئے دست با دعا ہونا چاہئے۔ ان کاکہنا تھا کہ حکومت سنبھالنے کے باوجود ان کے دربار بری امام سرکار پر حاضری نہ دینے کی وجہ سے عمران خان کی حکومت کیلئے مشکلات کھڑی ہورہی ہیں اور مسائل میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ انہیں فوری حاضری دینا چاہئے۔ انہوں نے عمران خان کو دربار پر حاضری کی دعوت دی او ر کہا کہ ماضی میں بھی جس نے وفاق میں حکومت کے باوجود بری امام سرکار کی حاضری کو نظر انداز کیا ان کیلئے مشکلات پیدا ہوتی رہی ہیں جب تک کہ انہوں نے حاضری یقینی نہیں بنائی۔ عمران خان کو فوری بری امام سرکار کی حاضری یقینی بنانے کیلئے اقدامات کرنا ہوں گے۔ تاکہ ان کی حکومت کیلئے کم سے کم مسائل کھڑے ہوں۔

Related posts