میئر رزاق ملک کی زیرنگرانی تاریخی آٹھ بازاروں سے کروڑوں کی بھتہ وصولی


 

فیصل آباد(احمد یٰسین)میاں شہباز شریف کے چہیتے میئر فیصل آباد رزاق ملک کی نگرانی میں شہر کے تاریخی آٹھ بازاروں اور مارکیٹوں سے تجاوزات مافیا کی پشت پناہی کرکے ماہانہ ایک کروڑ روپے کا بھتہ وصول کرنے کا انکشاف ہوا ہے ۔ میونسپل کارپوریشن کے عملہ نے بھتہ وصولی کرکے تجاوزات مافیا کو شہر کا حلیہ بگاڑنے کی کھلی چھٹی دے رکھی ہے۔ بھتہ وصولی میں کارپوریشن عملہ کے علاوہ کئی امقامی بلدیاتی نمائندے بھی ملوث پائے جا رہے ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق فیصل آبا د کے تاریخی آٹھ بازار اور ملحقہ مارکیٹیں تجاوزات مافیا کے قبضے میں ہیں۔ میئر فیصل آباد رزاق ملک اور کارپوریشن حکام نے تجاوزات مافیا کو کھلی چھٹی دے رکھی ہے ۔تمام بازاروں میں کئی کئی گز جگہ تجاوزات مافیا نے گھیر رکھی ہے اور بازاروں سے پیدال گزرنا بھی محال ہے۔ ذرائع کے مطابق آٹھ بازاروں اور مارکیٹوں سے میئر فیصل آباد کا چہیتا عملہ تجاوزات مافیا سے ماہانہ ایک کروڑ روپے سے زائد بھتہ اکٹھا کرتا ہے آٹھ بازاروں اور دیگر تجارتی مراکز میں سڑکیں‘ گلیاں ‘ بازار تجاوزات مافیا کے حوالے کرکے کارپوریشن عملہ کھلے عام بھتہ وصولی کرتا ہے۔ کارپوریشن کیساتھ اس دھندے میں درجن بھر بلدیاتی نمائندے بھی ملوث ہیں۔ بلدیاتنی نمائندے تجاوزات مافیا کی سرپرستی کرتے اور بھتہ وصولی میں کارپوریشن عملے کے معاون بن جاتے ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق فیصل آباد کے تجارتی مراکز میں بھتہ وصولی کھلے عام کی جارہی ہے۔لینڈ آفیسر اور لینڈ انسپکٹرز کھلے عام تجاوزات مافیا کی سرپرستی کرتے ہیں اور ان سے روزانہ کی بنیاد پر نذرانہ حاصل کیا جاتا ہے۔ دھندے میں نیچے سے اوپر تک کارپوریشن کا تمام عملہ ملوث ہے۔ میونسپل کارپوریشن کے اپنے اعدادوشمار کے مطابق ماہانہ ایک کروڑ روپے سے زائد کی بھتہ وصولی کی جا رہی ہے۔ بھتہ خوری میں میئر رزاق ملک خود براہ راست ملوث بتائے جاتے ہیں۔ میئر کا ایک بندہ کارپوریشن میں ان کے معاملات دیکھتا اور بھتہ وصولی مہم کی نگرای کرتا ہے۔ میئر فیصل آباد نے غیرقانونی طور پر کارپوریشن کے بیلداروں‘ کلرکوں ‘ چوکیداروں کو لینڈ انسپکٹرز لگا رکھا ہے ۔ لینڈ ڈیپارٹمنٹ کا کوئی بھی اہلکار اپنی اصل ڈیوٹی نہیں کر رہا ۔ عملے کو زیادہ گریڈ کی ذمہ داریاں دے رکھی ہیں ۔ کام سے زیادہ یہ لوگ بھتہ وصولی مہم میں مصروف رہتے ہیں اور میئر کیلئے نذرانے اکٹھے کرتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق بھتہ خوری میں چیف آفیسر زبیر نت اور میئر رزاق ملک سمیت تمام عملہ ملوث ہے۔ اور تجاوزات مافیا کو شہر کا حلیہ بگاڑنے کی کھلی چھٹی دے رکھی ہے۔ تجاوزات مافیا کیخلاف ہزاروں شکایات آئیں مگرمیئر فیصل آباد، چیف آفیسر زبیر نت اور دیگر عملہ ان پر کارروائی کرنے کی بجائے تجاوزات مافیا اور ان کے سرپرستوں کو ان کے بارے میں مخبری کر دیتے۔ کارپوریشن حکام کا یہ غیرذمہ دارانہ روئیہ بازاروں میں لڑائی جھگڑوں کا بھی باعث بنتا ہے۔ اور لڑائی جھگڑوں کے سینکڑوں واقعات اس کے شاہد ہیں۔پی ٹی آئی حکومت آنے کے باوجود کارپوریشن کے بھتہ خور مافیا کیخلاف کوئی کام نہیں ہوا جبکہ شہریوں سے بھتہ وصولی کا سلسلہ کھلے عام جاری ہے۔ اور شہر بھر میں تجاوزات کرکے شہر کا حلیہ بگاڑنے والوں کو کھلی چھٹی دی ہوئی ہے۔

Related posts