آزادی مارچ کیخلاف کارروائیوں کیلئے پنجاب پولیس کی چھٹیاں منسوخ

فیصل آباد (نیوز لائن) آزادی مارچ کے پیش نظر پنجاب پولیس کے اہلکاروں کی چھٹیاں منسوخ کردی گئی ہیں جبکہ پنجاب کانسٹیبلری کے اڑھائی ہزار اہلکاروں کو ہنگامی ”اینٹی روئٹس“ ڈیوٹی کیلئے الرٹ کردیا گیا ہے ۔ تفصیل کے مطابق مولان فضل الرحمان کے آزادی مارچ کے حوالے سے اطلاعات ہیں کہ حکومت اس میں لوگوں کی شرکت روکنے کی پلاننگ کررہی ہے۔ اس حوالے سے پولیس کو ریڈ الرٹ کردیا گیا ہے۔ پنجاب پولیس کے تمام اہلکاروں کی چھٹیاں منسوخ کردی گئی ہیں۔آئی جی پنجاب کی طرف سے تمام اضلاع کے ڈی پی اوز اور سی پی اوز کو ہدائت کی گئی ہے کہ اہلکاروں کی سو فیصد نفری کو ڈیوٹی پر طلب کر لیا جائے۔ اور ضلعی پولیس افسران نے رخصت پرجانے والے ملازمین کوفوری بنیاد پرڈیوٹی پرحاضری یقینی بنانے کے احکامات جاری کردئیے ہیں۔آزادی مارچ کے دوران امن وامان کی صورتحال کے پیش نظراینٹی رائٹ سامان سے لیس پنجاب کانسٹیبلری کے اڑھائی ہزارجوان ہنگامی ڈیوٹی پرمامورکردیئے گئے۔125ریزروہائے میں شامل 2160جوانوں کولاہور،فیصل آباد،راولپنڈی ۔ملتان اورفاروق آبادمیں ہردم تیاررہنے کاپابندکیاگیاہے ۔آزادی مارچ کے حوالہ سے کسی بھی ہنگامی صورتحال میں پنجاب کانسٹیبلری کے جوان مجازافسران کے حکم پرمظاہرین کوقابوکرنے کے لئے لاٹھی چارج اورآنسوگیس کااستعمال کرسکیں گے۔17ریزروہائے میں شامل جوان بھی ہنگامی صورتحال میں طلب کئے جانے پرفوری طورپرڈیوٹی یقینی بنانے کے پابندہوں گے۔کمانڈنٹ پنجاب کانسٹیبلری کی طرف سے ماتحت عملہ کواہم نوعیت کی ڈیوٹی ذمہ داری سے سرانجام دینے کاپابند کیاگیاہے ۔

Related posts