دھرنا ختم کروانے کیلئے مولانا کے پاؤں پکڑنے کو تیار ہوں: طاہر اشرفی

فیصل آباد (نیوز لائن) چیئرمین پاکستان علماء کونسل حافظ طاہر اشرفی نے کہا ہے اگر مولانا فضل الرحمن اگر دھرنا ختم کرنے کو تیار ہوں تو ہم ان کے پاؤں پکڑنے کو بھی تیار ہیں۔ملک میں امن اور معاملات افہام وتفہیم سے حل کرنے کے حامی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے فیصل آباد میں میڈیا کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر معاون خصوصی چیئرمین پی یو سی علامہ طاہر الحسن، مولانا امین الحق اشرفی،صاحبزادہ حمزہ طاہر،مفتی ضیا مدنی،مولانااشفاق پتافی،مولانا حق نواز خالداور دیگر ان کے ہمراہ تھے۔ حافظ طاہر اشرفی نے کہا کہ کچھ عناصر جلتی پر تیل ڈال کر مسئلہ کشمیر کو پس پشت ڈالنا چاہتے ہیں۔مولانا فضل الرحمن اپناغصہ کم کریں۔وزراء کو بھی سخت بیانات سے گریز کرنا چاہیے۔حکومت دھرنے کو آخری حد تک برداشت کرے۔دھرنے والے اور حکومت انتہا میں نہ جائیں،اگر مولانا تیار ہوں تو ہم ان کے پاوں پکڑنے کو تیار ہیں۔ہماری کوشش کی وجہ سے وزیر اعظم نے نرم رویہ اپنایا مولانا بھی لچک دکھائیں۔انہوں نے کہاکہ پاک فوج کو ٹارگٹ کیا جارہا ہے۔گزشتہ حکومت اور اپوزیشن نے ملکر نگران حکومت بنائی۔فوج کبھی بھی خود الیکشن کرانے نہیں آئی۔اداروں کے خلاف افواہ سازی بند کی جائے۔اداروں کے خلاف سازشیں ہورہی ہیں۔۔فوج کے خلاف ہر سازش ناکام بنا دیں گے۔ محمود خان اچکزئی کو جے یو آئی ف کے امیدوار نے ہرایا۔اس الیکشن بار ے کیا خیال ہے کس نے اس میں دھاندلی کی۔اگر ان کے الزامات پر جائیں تو جے یو آئی نے محمود خان کے خلاف دھاندلی کی۔دوروز قبل پیپلزپارٹی کا امیدوار جیت گیا اور یہ الیکشن بھی فوج کی نگرانی میں ہوا۔الزامات لگانے والوں کے تمام دعوے غلط ثابت ہوئے۔سربراہ علماء کونسل نے کہا کرتار پور راہداری صرف سکھوں کیلئے ہے کسی اور مذہب کو اس سے نہ جوڑا جائے۔سکھ برداری کے لوگ اس مخصوص راستے پر آئیں گے اور وہاں سے واپس چلے جائیں گے۔ختم نبوت کے معاملے پر حکومت نے کلیئر موقف دیا۔اس حوالے سے اسپیکر قومی اسمبلی رولنگ کا خیر مقدم کرتے ہیں۔انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ حکومت اور دھرنے والوں میں کس بات پر ڈیڈلاک ہے وہ غائب کا علم نہیں جانتے۔

Related posts