ن لیگی ایم پی اے کی پی ٹی آئی رہنما پر فائرنگ‘ بال بال بچے

فیصل آباد(نیوز لائن) مسلم لیگ ن کے مقامی ایم پی آئی اجمل آصف نے اپنے گن مینوں کی مدد سے تحریک انصاف کے رہنما اور سابق ایم این اے ڈاکٹر نثار احمد کو نواحی علاقے میں گھیر کر اندھا دھند فائرنگ کا نشانہ بنا ڈالا۔ فائرنگ سے سابق ایم این اے کی گاڑی کو شدید نقصان پہنچا تاہم ان کے ساتھی انہیں بچا کر نکل گئے۔ پولیس نے ن لیگی ایم پی اے اور ان کے ساتھیوں کیخلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔ نیوز لائن کے مطابق تحریک انصاف کے رہنما سابق ایم این اے ڈاکٹر نثار احمد کے ایک ساتھی نے پولیس کو دی گئی درخواست میں بتایا ہے کہ رسالہ روڈ پر کمیونٹی کالج جھنگ روڈ کے قریب ڈاکٹر نثار اپنے ساتھیوں کے ہمراہ جارہے تھے کہ تعاقب میں آنیوالی گاڑیوں میں سوار مسلم لیگ ن کے ایم پی اے اجمل آصف سکنہ67ج ب سدھار اور اسکے پانچ گن مینوں نے ان کی گاڑی دیکھ کر اندھا دھند اور جان لیوا فائرنگ کی۔ سابق ایم این اے کے ڈرائیور نے مہارت کا مظاہرہ کرتے ہوئے گاڑی بھگادی اور انہیں بچا کر لے جانے میں کامیاب ہو گیا۔ فیصل آباد پولیس نے ن لیگی ایم پی اے اجمل آصف کیخلاف اقدام قتل‘ اسلحہ کی سرعام نمائش‘ فائرنگ اور دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے۔ اس حوالے سے ایم پی اے اجمل آصف کا مؤقف ہے کہ سابق ایم این اے ڈاکٹر نثار احمد اور اسکے گن مینوں نے ہماری گاڑی روک کر انتہائی غلیظ گالیاں دیتے ہوئے جدید اسلحہ سے فائرنگ کی جس سے ہم خوش قسمتی سے بچ نکلے۔ لیگی ایم پی اے نے بھی اپنے ایک ساتھی کی طرف سے پولیس کو سابق ایم این اے ڈاکٹر نثار احمداور ان کے ساتھیوں کیخلاف درخواست دیدی ہے۔ پولیس نے اس پر کراس ورشن درج کرلیا ہے۔

Related posts