ٹارگٹ کلنگ : رانا ثناءاللہ کے داماد کا اعتراف جرم‘ مزید گرفتاریاں متوقع

فیصل آباد (احمد یٰسین) مسلم لیگ ن کے سابق صوبائی وزیر قانون رانا ثناءاللہ خاں کے داماد احمد شہریار نے سمن آباد کے دوبھائیوں کی ٹارگٹ کلنگ کی پلاننگ کا اعتراف جرم کرلیا ہے۔ پولیس نے احمد شہریار کی نشاندہی پر واردات کی منصوبہ بندی والی جگہ‘ ٹارگٹ کیلئے احکامات دئیے جانے اور دیگر اہم نقاط بارے تفصیلات حاصل کرلی ہیں۔ احمد شہر یار کی نشاندہی پر ہی رانا ثناءاللہ کے پی اے طارق جانباز کو شواہد حاصل کرنے کیلئے حراست میں لیا گیا ہے۔ جبکہ ٹارگٹ کلنگ کے تانے بانے منشیات سمگلنگ اور منشیات کی مقامی فروخت کے ساتھ ملنے کی بھی رپورٹس سامنے آئی ہیں۔ٹارگٹ کلنگ کرنے والا ”شوٹر“ پہلے ہی پولیس کی حراست میں ہے۔ نیوز لائن کے مطابق مبینہ طور پر رانا ثناءاللہ خاں کی سرپرستی میں چلنے والے پولیس انسپکٹر ٹارگٹ کلنگ گینگ کیس میں اہم شواہد ہاتھ آنے کی اطلاعات ہیں۔ رانا ثناءاللہ خاں کے رہائشی علاقے سمن آباد کے دو بھائیوں آصف بٹ اور عاطف بٹ کا قتل بھی اس ٹارگٹ کلنگ گینگ کے ہاتھوں ہونے کے متعدد ثبوت سامنے آئے۔ دونوں بھائیوں کی ٹارگٹ کلنگ کی منصوبہ بندی کے حوالے سے پولیس کی تفتیش میں رانا ثناءاللہ کے داماد کے اعتراف جرم کرنے کی بھی اطلاعات ہیں۔ پولیس حکام کے مطابق احمد شہریار نے منصوبہ بندی کا اعتراف کیا ہے۔ منصوبہ بندی اور ٹارگٹ کلنگ کیلئے شوٹر کے ساتھ رابطہ کرنے اور اسلحہ کی فراہمی و نشاندہی بارے بھی حقائق بنیان کردئیے ہیں۔ احمد شہریار کی نشاندہی پر ہی پولیس نے رانا ثناءاللہ کے پی اے طارق جانباز کو بھی حراست میں لے لیا گیا ہے۔ اس ٹارگٹ کلنگ کے حوالے سے پولیس تفتیش میں ہومی سائیڈ سیکشن کی رپورٹس بھی اس جرم میں احمد شہریار اور رانا ثناءاللہ اور ان کے ساتھیوں کے ملوث ہونے کی نشاندہی کررہی ہیں۔ شوٹر علی کمانڈو اور احمد شہریار کے رابطوں کی بھی تصدیق ہوئی ہے۔ذرائع کے مطابق پولیس کی تفتیش میں بٹ برادران کے علاوہ بھی متعدد وارداتیں بھی اسی منظم انداز میں کی گئی ہیں۔ مسلم لیگ ن کے رہنما اور مارکیٹ کمیٹی کے سابق چیئرمین علی اصغر بھولا گجر‘ شانی اور متعدد دیگر وارداتیں اسی انداز میں اور اسی گروہ کے ہاتھوں ٹارگٹ کرکے قتل کروائی گئی وارداتیں ہیں۔ذرائع کے مطابق سمن آباد کے بٹ برادران کی ٹارگٹ کلنگ کے تانے بانے منشیات فروشی کے ساتھ ملنے کی بھی اطلاعات ہیں۔ احمد شہر یار کی نشاندہی اور اعترافات کو پولیس اس کیس کا اہم موڑ قرار دے رہی ہے۔ ٹارگٹ کلنگ گینگ کیس میں آئندہ دنوں میں متعدد اہم شخصیات کی گرفتاریوں کے امکانات بھی ظاہر کئے جارہے ہیں جبکہ رانا ثناءاللہ خاں کو بھی ٹارگٹ کلنگ گینگ کیس میں شامل تفتیش کئے جانے پر غور کیا جارہا ہے۔ پولیس اس حوالے سے شواہد کو جمع کررہی ہے۔ جبکہ شامل تفتیش کئے گئے پولیس افسران سے بھی اس حوالے سے اہم معلومات ملی ہیں۔آئندہ چند ہفتے اس ٹارگٹ کلنگ گینگ کے وارداتوں کے سراغ لگانے کے حوالے سے اہم قرار دئیے جارہے ہیں اور یہ بھی توقع ظاہر کی جارہی ہے کہ بیرون ملک فرار سابق ایس ایچ او رانا فرخ وحید کو بھی پاکستان لایا جائے گا اور اس معاملے میں شامل تفتیش اور وعدہ معاف گواہ بنانے پر غور ہوسکتا ہے۔ رانا فرخ وحید پہلے ہی ایک ویڈیو بیان میں وعدہ معاف گواہ بننے کا عندیہ دے چکے ہیں۔ پولیس حکام کے مطابق اس معاملے کی ہر پہلو سے تحقیقات کی جارہی ہیں اور یہ فیصل آباد کی تاریخ کا اہم ترین کیس ثابت ہوگا۔

Related posts