ٹریفک سگنلز کی مسلسل خرابی: کمشنر کا کارپوریشن حکام پر اظہار برہمی


فیصل آباد(نیوزلائن)ٹریفک سگنلز کی مسلسل خرابی پر کمشنر فیصل آباد آصف اقبال نے کارپوریشن حکام کیساتھ شدید برہمی کا اظہا ر کیا ہے۔ جبکہ میونسپل کارپوریشن سے واٹر فلٹریشن پلانٹس سے متعلق رپورٹ بھی طلب کرلی ہے۔ایک اعلیٰ سطحی اجلاس کے دوران کمشنر آصف اقبال نے عوام کوصاف پانی کی بلا تعطل فراہمی یقینی بنانے پر زور دیا ۔سڑکوں پرغیر ضروری اورآہنی سپیڈ بریکر کے نقصانات کے جائزہ کا حکم دیاجبکہ بار بار خراب ہونے والے ٹریفک سگنلزکے حوالے سے کارپوریشن اور ٹریفک پولیس کو مشترکہ پلاننگ کرنے کی ہدایت کردی۔ اجلاس کے دوران کمشنر آصف اقبال چوہدری نے شہرمیں صاف پانی کی فراہمی کیلئے نصب واٹر فلٹریشن پلانٹس کو پائیدار بنیادوں پر اپریشنل رکھنے کیلئے متعلقہ محکموں سے سفارشات طلب کر لیں جبکہ میونسپل کارپوریشن کے افسران کو تمام واٹر فلٹریشن پلانٹس کا سروے کرکے ان کی ہیت کے بارے میں تازہ ترین رپورٹ فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے ۔ اس ضمن میں ایک خصوصی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کمشنرنے کہا کہ شہریوں کے لئے پینے کے صاف پانی کی دستیابی بے حد ناگزیر ہے جس کیلئے واٹر فلٹریشن پلانٹس کو مستقل بنیادوں پر بلا تعطل اپریشنل رہنا چاہئے ۔ کمشنر نے شہر کے بعض چوکوں میں ٹریفک سگنلز کے بار بار خراب ہونے یا عدم دستیابی پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے میونسپل کارپوریشن اور ٹریفک پولیس کے حکام کو مشترکہ سروے کرکے پلاننگ کرنے کی تاکید کی اورکہا کہ ٹریفک کے دباؤ کی مینجمنٹ کے لئے موثر لائحہ عمل اختیار کیا جائے ۔ ڈویژنل کمشنر نے شہر کی شاہرات پر غیر ضروری سپیڈ بریکرز اور ضرورت طلب سپیڈ بریکر کے بارے میں سروے کرنے کی تاکید کی اور کہا کہ آہنی سپیڈ بریکر کے ٹیکینکل امور اور مریضوں کیلئے ان کے نقصانات کے بارے میں جائزہ لیا جائے ۔ اجلاس میں قائمقام ڈپٹی کمشنر محبوب احمد ‘ ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ مہررمضان ‘ چیف انجینئر ایف ڈی اے اصغر علی ‘ چیف انجینئر واسا خالد حسن ‘ ڈپٹی ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ ڈاکٹر نوید ‘ ایکسئین میونسپل کارپوریشن خالد جاوید ‘ ایکسئین انہار غلام مصطفے ‘ ڈپٹی ڈائریکٹر ایف ڈی اے مہرایوب ‘ ڈی ایس پی ٹریفک عمران شریف اور دیگر افسران موجودتھے ۔ آصف اقبال چوہدری نے بلااجازت روڈ کٹ کاسخت نوٹس لیتے ہوئے ایسے امور کو چیک کرنے کے لئے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے جس میں متعلقہ اسسٹنٹ کمشنر کے علاوہ ایف ڈی اے ‘ پی ایچ اے ‘واسا ‘ میونسپل کارپوریشن اور محکمہ شاہرات کے افسران کو شامل کیا گیاہے ۔ یہ کمیٹی شہر بھر کا سروے کرکے غیر قانونی روڈ کٹ یا این او سی کے حامل روڈ کٹ کی تعمیراتی بحالی کے بارے میں دو دن کے اندر رپورٹ پیش کرے گی ۔

Related posts