پابندی کے باوجود سرکاری سرپرستی میں غیرملکی این جی اوکا سائنس میلہ


فیصل آباد(احمد یٰسین )غیرملکی این جی اوز کے بغیر اجازت سرگرمیاں کرنے پر پابندی اور تعلیمی اداروں میں این جی اوز کی تقاریب کے انعقاد کی ممانعت کے باوجود فیصل آباد میں ایک غیرملکی این جی او کے سائنس میلہ کو سرکاری سرپرستی میں ایک تعلیمی ادارہ میں منعقد کیا گیا اور بھرپور حکومتی پروٹوکول کیساتھ غیرملکی این جی او کی تقریب کو سرکاری ظاہر کرکے اس کی بھرپور انداز میں تشہیر اور کوریج کی جاتی رہی ۔ نیوزلائن کے مطابق حکومت پاکستان نے غیرملکی این جی اوز کے بغیر اجازت کام کرنے پر پابندی عائد کررکھی ہے۔ جبکہ پنجاب حکومت نے تعلیمی اداروں میں این جی اوز کی تقاریب کی سختی کیساتھ ممانعت کررکھی ہے اور ایسی کسی بھی تقریب سے قبل پنجاب حکومت سے پیشگی اجازت لینے کا حکم جاری کررکھا ہے۔ فیصل آباد میں ضلعی انتظامیہ اور تعلیمی اداروں نے ان پابندیوں کی کھلے عام خلاف ورزی شروع کررکھی ہے۔ صرف یہی نہیں غیرملکی این جی او کو بھرپور سرکاری پروٹوکول بھی دیا جا رہا ہے۔ملک بھر میں تعلیم کے فروغ کی آڑ میں سرکاری تعلیمی اداروں کو مانیٹر کرنے اور پرائیویٹ تعلیمی اداروں کو فروغ دینے کے ایجنڈے پر عمل پیرا ’’الف اعلان ‘‘ نامی ایک غیرملکی این جی او نے فیصل آباد میں ایک سائنس میلہ منعقد کیا۔الف اعلان کے حوالے سے یہ بھی سامنے آیا ہے کہ وہ پنجاب حکومت‘ محکمہ تعلیم اور سرکاری سکولوں کیخلاف رپورٹس جاری کرنے میں بھی ملوث ہے۔ سوشل میڈیا پر الف اعلان نے محکمہ تعلیم کیخلاف باقاعدہ مہم بھی شروع کر رکھی ہے۔یہ این جی او اپنے منفی پروپیگنڈے کیلئے میڈیا کو بھی استعمال کرتی رہی ہے جبکہ میڈیا نمائندوں کی اپنے مخصوص ایجنڈے کے تحت برین واشنگ کرنے اور اپنے ایجنڈے کے مطابق چلانے کیلئے تربیتی سیشن بھی کرتی رہتی ہے۔ اس غیرملکی این جی او کے سائنس میلہ کیلئے محکمہ تعلیم اور ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن کے سرکاری افسران سرگرم رہے ۔اور سرکاری و نجی سکولوں کواحکامات دئیے جاتے رہے کہ غیرملکی این جی او کے سائنس میلہ میں لازمی شرکت کریں اور اسے ہر صورت کامیاب بنایا جائے ۔ محکمہ تعلیم اور حکومت کیخلاف منفی پروپیگنڈے میں ملوث اس این جی اونے سائنس میلہ کی آڑ میں اپنی پروموشنل مہم چلائی ۔ سائنس میلہ کیلئے فنڈنگ بھی ایک غیرملکی این جی او نے کی۔غیرملکی این جی او کے سائنس میلہ کیلئے سرکاری دفاتر میں میٹنگز کی جاتی رہیں ۔ جی سی یونیورسٹی‘ محکمہ تعلیم سکول ونگ کے افسران‘ ڈائریکٹوریٹ آف کالجز‘ پرائیویٹ سکولز کی تنظیموں‘ سرکاری سکولوں کے پرنسپلز کو ڈپٹی کمشنر آفس میں بلا کر اس غیرملکی این جی او کے سائنس میلہ میں شرکت یقینی بنانے کے احکامات دئیے جاتے تھے ۔ غیرملکی این جی او کو غیرمعمولی پروٹوکول دلوانے کے چکر میں پی ایچ اے ‘ ایوب ریسرچ‘ چائلڈ پروٹیکشن بیورو‘ جی سی یونیورسٹی فیصل آباد‘ انسٹی ٹیوٹ آف آرٹ اینڈ ڈیزائن اور متعدد دیگر محکموں کے افسران کو بھی ڈپٹی کمشنر آفس میں بلوا کر سائنس میلہ کے حق میں لیکچر جھاڑے گئے اور ان محکموں کو احکامات دے گئے کہ سائنس میلہ کیلئے الف اعلان کی بھرپور مدد کریں۔ جبکہ انتظامیہ نے اپنے اختیارات استعمال کرکے زرعی یونیورسٹی میں اس میلہ کے انعقاد کا انتظام کیا۔ڈپٹی کمشنر فیصل آباد اس کی افتتاحی اور اختتامی تقریب میں خود شریک ہوئے۔ تقریب میں زرعی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر ظفر اقبال بھی غیرملکی این جی او کے مقاصد اور پوزیشن بارے کوئی تحقیق کئے بغیر شریک ہوئے جبکہ جی سی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر محمد علی بھی اپنی اہم مصروفیات کے باوجود شریک ہوئے ۔

Related posts