پنجاب حکومت نے میئر فیصل آباد کا لوٹ مار پلان ناکام بنا دیا


فیصل آباد(عاطف چوہدری) پنجاب حکومت نے میئر فیصل آباد کا ترقیاتی کاموں کے نام پر لوٹ مار کرنے کا منصوبہ ناکام بنا دیا ۔پی ٹی آئی حکومت کی طرف سے بلدیاتی ادارے توڑنے کا فیصلہ آنے پر میئر فیصل آباد نے مقامی بلدیاتی نمائندوں اور کارپوریشن حکام کیساتھ ملی بھگت کرکے 55کروڑ روپے کے ترقیاتی کاموں کے ٹھیکے دینے اور ان سے مال پانی بنانے کا منصوبہ بنایا تھا مگر عین آخری لمحات میں سیکرٹری لوکل گورنمنٹ نے میونسپل کارپوریشن فیصل آبادکو ترقیاتی سکیموں کے ٹینڈرز جاری کرنے سے روک دیا۔نیوزلائن کے مطابق پی ٹی آئی کی پنجاب حکومت نے صوبہ بھر میں بلدیاتی ادارے توڑنے اور نیا بلدیاتی نظام لانے کا فیصلہ کیا ہے۔ توقع کی جارہی ہے کہ آئندہ چند ہفتوں میں بلدیاتی ادارے توڑ دئیے جائیں گے۔ یہ فیصلہ سامنے آنے پر میئر فیصل آباد نے ہنگامی بنیادوں پر من پسند ترقیاتی کام اپنے’’ پسندیدہ‘‘افراد کو دینے کی پلاننگ کرنی شروع کردی۔ اس حوالے سے یہ بھی اطلاعات تھیں کہ کارپوریشن حکام اور بلدیاتی نمائندے ترقیاتی کاموں کے نام پر ٹھیکیداروں سے بھتہ خوری کررہے ہیں جسے انہوں نے کمیشن کا نام دے رکھا ہے۔ ذرائع کے مطابق میئر فیصل آباد رزاق ملک نے کارپوریشن کے 55کروڑ روپے کے ترقیاتی کاموں کے ٹھیکے دینے کا فیصلہ کیا تھا۔ ٹھیکے مخصوص افراد کو دینے کا طے پایا تھا اور ان سے کمیشن کے نام پر بھتی بھی طے کرلیا گیا تھا۔ ٹینڈر کی رسمی قانونی کارروائی صرف خانہ پری کیلئے کی جانی تھی۔ اس رسمی کارروائی کیلئے پانچ ستمبر کی تاریخ مقرر کی گئی تھی مگر عین آخری لمحات میں سیکرٹری لوکل گورنمنٹ پنجاب نے کارپوریشن کو حکام کو مذکورہ کاموں کا ٹھیکہ دینے سے روک دیا۔ ذرائع کے مطابق ٹھیکوں کے نام پر بڑے پیمانے پر قومی خزانے کو لوٹنے کا منصوبہ تیار کیا گیا تھا جو پنجاب حکومت کے بروقت اقدام سے ناکام ہو گیا۔ لوٹ مار پروگرام ناکام ہونے پر کارپوریشن دفاتر میں صف ماتم بچی ہوئی ہے۔ میئر رزاق ملک‘ ڈپٹی میئرز اور دیگر بلدیاتی نمائندے اور کارپوریشن عملہ سوگ منا رہے ہیں ۔

Related posts