پنجاب کالج میں گریجویشن ڈگری کلاسز کے داخلوں پر پابندی عائد

فیصل آباد (احمد یٰسین) ہائیر ایجوکیشن کمیشن نے صوبہ بھر میں پنجاب گروپ آف کالجز کے تمام کیمپسز میں گریجویشن ڈگری پروگرام کے داخلوں پر پابندی عائد کردی ہے۔ اس حوالے سے ایچ ای سی نے انتباہی نوٹس بھی جاری کردیا ہے اور کالج کی انتظامیہ کو سختی سے پابندکیا ہے کہ گریجویشن ڈگری پروگرام میں بالکل بھی داخلے نہ کرے۔ نیوز لائن کے مطابق ہائیر ایجوکیشن کمیشن پابندی عائد کرچکا ہے کہ کوئی بھی کالج بی اے ‘ بی ایس سی’ بی کام کے داخلے نہیں کرے گا۔ بی اے’ بی ایس سی ‘ بی کام کی ڈگری پر مکمل پابندی کے بعد گریجویشن کی سطح پر صرف ایسوسی ایٹ ڈگری پروگرام شروع کردیا گیا ہے۔متعدد کالجز پہلے ہی یہ پروگرام شروع کرچکے ہیں جبکہ مزید کررہے ہیں۔ تاہم ایچ ای سی نے ناکافی سہولیات اور دیگر وجوہات کی بناء پر پنجاب کالج کی تمام برانچز و کیمپسز میں گریجویشن کی اس ایسوسی ایٹ ڈگری پروگرام میں داخلوں پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔ایچ ای سی حکام کے مطابق صوبہ بھر میں پنجاب کالج کی کوئی برانچ یا کیمپس ایسوسی ایٹ ڈگری پروگرام میں طلبہ کے داخلے کرنے اور انہیں یہ ڈگری پروگرام پڑھانے کا مجاز نہیں ہے۔ ایسوسی ایٹ ڈگری پروگرام میں داخلے کرنے والے پنجاب کالج کی برانچ یا کیمپس کیخلاف سخت ایکشن لینے کا عندیہ دیا گیا ہے۔ ایچ ای سی نے اس بابت انتباہی نوٹس بھی جاری کردیا ہے ۔اس سے قبل ہائیر ایجوکیشن کمیشن پنجاب گروپ آف کالجز کی ملکیتی پرائیویٹ جامعہ ”یونیورسٹی آف سنٹرل پنجاب” کے فیصل آباد کیمپس کو بھی غیرقانونی قرار دے چکا ہے ۔ اس کے ساتھ ہی ایچ ای سی نے یہ بھی واضح کیا ہے کہ یونیورسٹی آف سنٹرل پنجاب کو لاہور کے مین کیمپس کے علاوہ لاہور سمیت پاکستان بھر میں کسی بھی شہر میں کیمپس بنانے یا کسی کالج کو الحاق دینے کی اجازت نہیں ہے۔ یونیورسٹی آف سنٹرل پنجاب کے مین کیمپس کے علاوہ تمام کیمپس غیرقانونی ہیں اور اس سے الحاق شدہ کالجز کا الحاق بھی غیرقانونی ہے ۔

Related posts