کراچی : چینی قونصلیٹ پر دہشت گردوں کا حملہ پولیس نے ناکام بنا دیا


کراچی(نیوزلائن) پاک چین دوستی کے دشمنوں کی کراچی میں دہشت گردی کی کارروائی ناکام بنا دی گئی، چینی قونصلیٹ پر دہشت گردوں کی فائرنگ سے 2 پولس اہلکار شہید اور 3 سویلین زخمی ہوگئے۔ فائرنگ کے تبادلے میں تین دہشتگرد مارے گئے، مرنے والے دہشت گردوں کے قبضے سے خود کش جیکٹس اور اسلحہ برآمد کر لیا گیا، آپریشن مکمل کر کے قونصلیٹ عمارت کو کلیئر کر دیا گیا۔ دہشت گرد سفید رنگ کی کار میں صبح ساڑھے 9 بجے کے قریب پہنچے، چینی قونصلیٹ کی طرف جانے والے راستے پر لگی رکاوٹوں کے باعث گاڑی دور کھڑی کر کے دہشت گردوں نے قونصلیٹ میں داخل ہونے کی کوشش پر حفاظت پر مامور گارڈز پر فائرنگ شروع کر دی۔ عینی شاہد کے مطابق حملہ آوروں کی تعداد 3 سے 4 تھی، فائرنگ کے دوران دھماکے آواز بھی سنائی دی گئی۔ اطلاع ملتے ہی پولیس، رینجرز، ایف سی اور پاک فوج کے دستے بھی پہنچ گئے، قانون نافذ کرنے والے اداروں نے قونصلیٹ سے ملحقہ علاقوں کو سیل کر دیا۔ جناح ہسپتال کی میڈیکل ڈائریکٹر سیمی جمالی نے بتایا کہ ہسپتال میں لائے جانے والے 2 اہلکار پولیس یونیفارم اور ایک زخمی سول ڈریس میں تھا۔ دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کی مانیٹرنگ کراچی پولیس چیف امیر شیخ نے خود کی، امیر شیخ نے میڈیا کو بتایا کہ پولیس کے 2 جوانوں نے اپنی جان پر کھیل کر خود کش حملہ آوروں کی قونصلیٹ میں داخلے کی کوش ناکام بنا دی۔ ڈی آئی جی ساؤتھ جاوید عالم اوڈھو نے میڈیا کو بتایا دہشت گردوں کی کار قبضے میں لے کر تحقیقات شروع کر دی ہے۔ موقع پر موجود بم ڈسپوزل سکواڈ اور قانون نافذ کرنے والے داروں نے تلاشی کے بعد علاقے کو کلیئر قرار دے دیا۔ دو سال قبل بھی قونصل خانے کے باہر حملہ ہوا تھا جس کے بعد سکیورٹی مزید بڑھا دی گئی تھی۔

Related posts