کرپٹ بیورو کریٹس کیخلاف ’’ہنٹ آپریشن‘‘ شروع کرنے کا فیصلہ


فیصل آباد(میاں افتخار )پی ٹی آئی حکومت نے کرپشن میں ملوث سرکاری افسران کیخلاف ’’ہنٹ آپریشن ‘‘ شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ کارروائی کے دوران سیاسی وابستگیاں رکھنے والوں کو بھی کرپشن کی دفعات کے تحت ہی چارج کیا جائے گا۔ افسران کے اپنے اور ان کے قریبی رشتہ داروں کے اثاثہ جات کی تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق پی ٹی آئی حکومت نے بیوروکریسی میں کرپشن کے خاتمے کیلئے بڑے پیمانے پر کارروائی کا آغاز کردیا ہے۔ مالی و اخلاقی بدعنوانیوں ‘ اختیارات کے ناجائز استعمال اور سیاسی وابستگیوں پر بڑے بڑے عہدے حاصل کرنے والے ہنٹ آپریشن کے دوران خاص نشانہ ہوں گے۔ ذرائع کے مطابق افسران کی سیاسی وابستگی پر بڑے بڑے عہدے حاصل کرنے کا معاملہ بطور خاص دیکھا جا رہا ہے۔ سیاسی جماعتوں کیساتھ وابستگی رکھنے والے اور سیاسی شخصیات کی پشت پناہی پر عہدے حاصل کرنے والوں کیخلاف بڑے پیانے پر کارروائی کی جائیگی۔ نیوزلائن کے مطابق پی ٹی آئی حکومت نے صرف سابقہ حکمران جماعت ہی نہیں بلکہ کسی بھی سیاسی پارٹی اور شخصیات کیساتھ وابستگی رکھنے والوں کو کارروائی کا نشانہ بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق میگا پراجیکٹس پر کام کرنیوالے افسران کے اثاثہ جات کی چھان بین شروع کروا دی گئی ہے۔ مہنگی جائیدادیں ‘ بڑی گاڑیاں ‘ مہنگے سکولوں میں بچے پڑھانے والو ں سے پوچھ گچھ کی جائے گی اور ان کے اثاث جات اور ذرائع آمدن کی انسپکشن کی جائے گی۔ ہنٹ آپریشن کیلئے نیب کے علاوہ ایف آئی اے اور حساس اداروں کی خدمات بھی حاصل کی جارہی ہیں ۔ بیوروکریٹس کی لسٹیں بنائی جارہی ہیں اور ان کی جوائننگ کے وقت کی جائیدادوں اور اثاثہ جات کی موجودہ پوزیشن کے تناظر میں تحقیقات کی جارہی ہیں۔

Related posts