گائے بناسپتی زہر قاتل ہے: استعمال بیماریوں کا باعث بننے لگا


فیصل آباد(احمد یٰسین)فیصل آباد میں بننے والا معروف برانڈ کا گھی ’’گائے بناسپتی‘‘ انتہائی مضر صحت قرار دیا جا رہا ہے ۔ گائے بناسپتی کا پنجاب فوڈ اتھارٹی بھی انتہائی مضر صحت اور بیماریوں کا موجب قرار دے چکی ہے۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی نے اس پر پابندی لگانے کا بھی اعلان کیا تھا مگر گائے بناسپتی کے ’’بااثر‘‘ مالکان اپنے مضر صحت اور بیماریاں بانٹنے والے گھی کو مستقل پابندی سے بچانے میں ’’کامیاب‘‘ ہوگئے۔ نیوزلائن کے مطابق فیصل آباد میں تیار ہونے والے معروف برانڈ ’’گائے بناسپتی‘‘ کے گھی کو ماہرین مضر صحت قرار دیتے ہیں۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی متعدد مرتبہ اس کے سیمپل لے چکی ہے اور لیبارٹری تجزئیے میں گائے بناسپتی گھی انسانی صحت کیلئے انتہائی مضر پایا گیا۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی نے کچھ عرصہ قبل گائے بناسپتی سمیت متعدد برانڈز کے گھی کو مضر صحت قرار دیا تھا ۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی نے اس کی مینوفیکچرنگ روکنے اور مارکیٹ میں اس کا سٹاک قبضے میں لینے سمیت متعدد اعلانات کئے ۔ اس حوالے سے اقدامات جاری تھی کہ گائے بناسپتی کے بااثر مالکان نے اپنا سیاسی اثرورسوخ استعمال کرکے شہباز شریف حکومت کو گائے بناسپتی کی جاں بخشی پر راضی کر لیا۔اور شہباز شریف حکومت کی بعض اہم شخصیات نے پنجاب فوڈ اتھارٹی کو گائے بناسپتی کیخلاف کارروائی سے روک دیا۔ ذرائع کے مطابق گائے بناسپتی کے اجزاء آج بھی وہی ہیں جبکہ اس کی تیاری کا عمل اور فارمولے کو بھی پنجاب فوڈ اتھارٹی مضر صحت قرار دے چکی ہے۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی کی رپورٹس میں ہی سامنے آیا تھا کہ گائے بناسپتی سمیت متعددبرانڈز کے گھی کینسر اور دل کی بیماریوں سمیت متعدد موذی امراض کے پھیلنے کا باعث بن رہے ہیں اور ان کا استعمال فوری بند کیا جانا ضروری ہے۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی نے گھی کمپنیوں کو گھی کی پیداوار بند کرنے کا نوٹس بھی دے رکھا ہے اور اس کیلئے فائنل نوٹس بھی جاری کیا جا چکا ہے۔

Related posts