گالم گلوچ کرنیوالی خاتون اے سی سٹی کیخلاف پٹواریوں کا دھرنا


فیصل آباد(ندیم جاوید)خاتون اے سی کی بدزبانی اور گالم گلوچ کیخلاف فیصل آباد سٹی کے پٹواریوں نے اے سی آفس کے سامنے دھرنا دیدیا۔ دھرنا دینے والوں کہنا ہے کہ خاتون اے سی سٹی ان کے ساتھ گالم گلوچ اور بدزبانی کرتی ہے۔ ان سے ایسے کام لئے جاتے ہیں جو کہ ان کی ڈیوٹی کا حصہ ہی نہیں ہیں۔ خاتون اے سی سٹی خود کوئی کام کرنے کو تیار نہیں اور پٹواریوں کو کولہو کے بیل کی طرح 24گھنٹے کام کرنے پر مجبور کررہی ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق فیصل آباد تحصیل سٹی کے پٹواریوں نے خاتون اے سی سٹی کیخلاف ان کے آفس کے سامنے دھرنا دے رکھا ہے۔ دھرنا دینے والے پٹواریوں کا مؤقف ہے کہ خاتون اے سی سٹی انتہائی گھٹیا زبان استعمال کرتی ہیں۔ اپنے عملے کیساتھ اور خاص طور پر پٹواریوں کیساتھ ان کا رویہ انتہائی ناروا ہوتا ہے۔ گالی گلوچ ہر وقت ان کی زبان پر ہوتی ہے۔ انتہائی گھٹیا الفاظ میں مخاطب ہوتی ہیں ۔ پٹواریوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ اے سی سٹی ڈاکٹر انعم ان سے ایسے کام بھی کرنے کو کہتی ہیں جو کہ ان کی ڈیوٹی کا حصہ نہیں ہے مگر انہیں مجبور کرکے دوسروں کے کاموں کو بھی کرنے کا کہا جاتا ہے ۔پٹواریوں کو رات گئے تک کام کرنے کا کہا جاتا ہے جبکہ خود اے سی سٹی ہر وقت آفس سے غائب پوئی جاتی ہیں۔ عملے کو 24گھنٹے کام کرنے پر مجبور کیا جاتا ہے۔ اس حوالے سے رابطہ کرنے پر اے سی سٹی ڈاکٹر انعم کا کہنا تھا کہ پٹواریوں سے وہی کام لئے جارہے ہیں جو سب ہی لیتے ہیں وہ کسی سے کوئی انوکھا کام نہیں لے رہیں۔ سب تحصیلوں میں پٹواریوں سے یہ کام لئے جاتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پٹواریوں کو پرائس کنٹرول‘ اوور چارجنگ مہم‘ غیرقانونی بقر منڈیوں‘ گلی محلوں میں جانوروں کی غیرقانونی فروخت روکنے کا کہا گیا ہے۔ اس کام میں اب رات گئے تک کام کرنا پڑتا ہے تو اس میں بھی کوئی قباحت نہیں ہے۔ یہ کام سب ہی تحصیلوں میں پٹواریوں سے لئے جارہے ہیں۔ تحصیل سٹی کے پٹواریوں کو بھی کرنا ہی پڑیں گے۔ انہوں نے گالی گلوچ کی تردید کی اور کہا کہ جو کام نہیں کرے گا اس کیخلاف ایکشن ہوگا اور اسے باتیں بھی سننا پڑیں گی۔

Related posts