فیصل آباد ریجن کے 10ارکان اسمبلی کا رانا ثناء اللہ کیخلاف محاذ


فیصل آباد(نیوزلائن)فیصل آباد ریجن کے 10ارکان اسمبلی نے رانا ثناء اللہ کیخلاف محاذبنا لیا ہے اور رانا ثناء اللہ کے مستعفی نا ہونے پر خود استعفے دینے کا اعلان کر دیا ہے۔نیوزلائن کے مطابق فیصل آباد ریجن کے ارکان اسمبلی صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ کیخلاف ادھار کھائے بیٹھے ہیں۔ دھرنا آپریشن کا معاملہ سامنے آتے ہی انہوں نے زاہد حامد کیساتھ رانا ثناء اللہ کے مستعفی ہونے کا بھی مطالبہ کردیا ہے۔جھنگ کے چار ایم این ایز اور پانچ ایم پی ایز نے صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ اور وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے اپنے استعفے پیر حمیدالدین سیالوی کے حوالے کر دئیے ہیں۔جھنگ کے اہم لیگی ایم این ایز شیخ اکرم‘ غلام محمد لالی‘ حامد حمید اور ذوالفقار بھٹی اور ایم پی ایز پیر حمید الدین سیالوی ‘ خان محمد بلوچ‘ مولانا رحمت اللہ‘ رانا منور‘عبدالرزاق دھلوں اکٹھے ہو گئے ہیں ۔ ان ارکان اسمبلی نے سیال شریف میں پیر حمید الدین سیالوی کی زیر قیادت ایک میٹنگ کی ۔ میٹنگ میں طے پایا کہ ختم نبوت کے معاملے پر عوامی جذبات کی حمائت کی جائے۔ اجلاس میں تمام ارکان اسمبلی نے اپنے استعفے لکھ کر پیر حمید الدین سیالوی کے حوالے کردئیے۔ ارکان اسمبلی نے یک زباں ہو کر مطالبہ دہرایا کہ زاہد حامد اور رانا ثناء اللہ کو مستعفی کیا جائے ۔ انہوں نے میاں شہباز شریف کے 48گھنٹوں کا وقت دیا اور کہا کہ 48گھنٹے میں رانا ثناء اللہ سے استعفیٰ نا لیا گیا تو وہ اپنے استعفے سپیکر کو بھجوا دیں گے۔فیصل آباد کے بھی ایک ایم این اے ڈاکٹر نثار احمد رانا ثناء اللہ کیخلاف محاذ بنائے ہوئے ہیں۔ وہ بھی اس پوائنٹ پر مستعفی ہونے کا سوچ رہے ہیں۔ وہ متعدد بار اعلان کر چکے ہیں کہ ن لیگ نے اپنا قبلہ درست نہ کیا اور رانا ثناء اللہ کی غیرقانونی سرگرمیاں بند نہ کیں تو وہ آئندہ الیکشن ن لیگ کے ٹکٹ پر نہیں لڑیں گے۔

Related posts

Leave a Comment