شہباز شریف کا رانا ثناء اللہ سے استعفیٰ لینے کا فیصلہ


فیصل آباد(نیوزلائن)وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے وزیر قانون رانا ثناء اللہ خاں سے استعفیٰ لینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔یہ انتہائی اقدام پارٹی کو انتشار سے بچانے کیلئے اٹھایا جا رہا ہے ۔اتوار تک اس بارے حتمی اعلان متوقع ہے۔ نیوزلائن کے مطابق ختم نبوت کے معاملے پارٹی میں انتشار بڑھنے اور سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ میں رانا ثناء اللہ کا نام آنے کی بناء پر فیصلہ کیا گیا ہے کہ رانا ثناء اللہ سے استعفیٰ لے لیا جائے ۔ذرائع کے مطابق قادیانیوں بارے بیان بھی ان کے استعفے کا موجب بن رہا ہے۔ سرگودھا اور جھنگ کے ارکان اسمبلی کا احتجاج اور مستعفی ہونے کا اعلان بھی اس استعفے کی وجہ بن رہا ہے۔پارٹی ذرائع اس بات کی تصدیق کر رہے ہیں کہ رانا ثناء اللہ کے استعفے کے معاملے پر میاں شہباز شریف کافی دن سے سوچ بچار کر رہے ہیں۔اور وہ حتمی طور پر فیصلہ کر چکے ہیں کہ استعفیٰ لے لیا جائے تا کہ پارٹی مزید انتشار کا شکار نہ ہو۔جبکہ ختم نبوت کے معاملے پر عوام کے جذبات کو مزید بڑھکنے سے بچایا جا سکے۔ذرائع کے مطابق قیادت سمجھتی ہے کہ ان حالات میں عوامی عدالت میں جانے سے پارٹی کو شدید نقصان ہوگا۔ ختم نبوت کے معاملے پر عوام میں غم و غصہ پایا جاتا ہے ۔ میاں شہباز شریف چاہتے ہیں کہ پیر آف سیال شریف پیر حمید الدین سیالوی کے فیصل آباد جلسے سے قبل رانا ثناء اللہ سے استعفیٰ لے لیا جائے ۔اتوار تک اس معاملے میں بڑی پیش رفت کی توقع ہے۔

Related posts

Leave a Comment