واسا فیصل آباد کے غیرملکی کمپنیوں سے 40غیرقانونی معاہدے


فیصل آباد(قیصر باجوہ)واسافیصل آبادنے بغیر کسی قانونی اختیار کے غیرملکیوں کمپنیوں سے ایم او یو سائن کرلئے۔ایف ڈی اے کو اعتمادمیں لیانہ ضلعی انتظامیہ اور میئر کو اس قابل سمجھا کہ شہر کی صورتحال بارے ان کی صلاح لے لی جائے۔ وزارت ہاؤسنگ سے مشاورت کی نہ وزیر بلدیات کو ہی اس معاملے سے آگاہ رکھنا ضروری سمجھا گیا۔ خلاف قوانین کئے گئے واسا فیصل آبادکے 40غیر ملکی معاہدوں کو وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے مسترد کر دیا اور ان پر کام نہ ہونے دیا۔نیوزلائن کے مطابق فیصل آباد میں واسا کے ایم ڈی نے 40غیرملکی کمپنیوں کیساتھ معاہدے کئے ہیں جوغیر قانونی نکلے۔معاملے کا علم ہونے پر پنجاب حکومت نے غیرملکی کمپنیوں کیساتھ کئے واسا کے 40معاہدے مسترد کردئیے اور ان میں سے کسی ایک بھی معاہدے پر کام کرنے کی اجازت نہیں دی۔ ایم ڈی واسا اپنی ذمہ داریاں خود نبھانے کی بجائے غیرملکیوں کے سہارے ہی کام کو ترجیح دی اور غیرملکیوں سے کئے معاہدے بحال کروانے کی کوشش کی مگر پنجاب حکومت نے کسی ایک بھی معاہدے کو بحال نہیں کیا ۔ واسا حکام پرانے معاہدے منسوخ ہونے پر ایک مرتبہ پھر غیرملکیوں کیساتھ معاہدے کرنے اور عوام کو سبز باغ دکھانے کیلئے کوشاں ہیں۔ نت نئی غیرملکی کمپنیوں کو معاہدوں کیلئے بلایا جا رہا ہے اور ڈالر حاصل کرنے کی مسلسل کوششیں ہو رہی ہیں۔

Related posts