شہباز شریف حکومت اپنا دودھ برانڈ مارکیٹ میں لانچ کریگی


فیصل آباد(احمد یٰسین)میاں شہباز شریف کی حکومت نے باقاعدہ ’’کاروبار‘‘ شروع کردیا۔شہباز شریف حکومت پرائیویٹ پبلک پارٹنر شپ کیساتھ اپنا مخصوص دودھ برانڈ مارکیٹ میں لانے کی تیاریاں کررہی ہے۔ اس کاروبار میں پنجاب حکومت کا پارٹنر میان شہباز شریف کے انتہائی قریب سمجھا جانے والا مسلم لیگ ن کا ایک اہم عہدیدار ہو گا۔دودہ کا اپنا مخصوص برانڈ مارکیٹ میں متعارف کروانے کیلئے پہلے سے موجود برانڈز کیخلاف انسدادی مہم اور کھلے دودھ کو مشکوک بنانے کی پروپیگنڈہ مہم چلائی جا رہی ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق میاں شہباز شریف کی حکومت ’’انمول ملک‘‘ کے نام سے اپنا مخصوص دودہ برانڈ متعارف کروانے جا رہی ہے۔ انمول ملک کی مارکیٹنگ مہم شروع کردی گئی ہے جبکہ اسے کامیاب بنانے کیلئے مارکیٹ میں پہلے سے موجود پیکٹ والے دودھ برانڈز کیخلاف بڑے پیمانے پر مہم بھی چلائی جا رہی ہے۔حکومتی اداروں کو استعمال کرکے ’’انمول ملک‘‘ کے حق میں اور دیگر برانڈز کیخلاف مہم چلائی جا رہی ہے۔دیگر برانڈز کے دودھ کو بدنام اور کھلے دودھ کے حوالے سے شکوک عام کرکے پنجاب حکومت اصل میں پرائیویٹ پارٹنر شپ سے مارکیٹ میں لانے والے اپنے دودھ برانڈ کی مارکیٹنگ کر رہی ہے۔پہلے سے موجود دودھ برانڈز کو بدنام اور کھلے دودھ کو مشکوک بنانے کیلئے پنجاب فوڈ اتھارٹی کو استعمال کیا جا رہا ہے۔ پنجاب میں مسلم لیگ ن کی ایک اہم شخصیت ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی کو اس مقصد کیلئے استعمال کررہی ہے جبکہ نئے دودھ برانڈ کو لانچ کرنے کیلئے بھی سرکاری اداروں کو ہی استعمال کیا جارہا ہے۔ دودھ کی ترسیل‘ سپلائی چین برقرار رکھنے ‘ سپلائی مراکز مختص کرنے‘ مارکیٹ میں جگہ بنانے‘ بڑے خریداری مراکز کو مستحکم کرنے کیلئے محکمہ لائیو سٹاک‘ مارکیٹ کمیٹی‘ ضلعی افسران‘ جوائنٹ سٹاک رجسٹرار کو استعمال کیا جانے کا پلان ہے۔ذرائع کے مطابق میاں شہباز شریف کی حکومت نے اپنے دودھ برانڈ ’’ انمول ملک‘‘کی لانچنگ کیلئے بڑے پیمانے پر کام شروع کردیا ہے اور بہت جلدپنجاب حکومت کی مہر کیساتھ اس کاروباری شخصیت کا پرائیویٹ پبلک پارٹنر شپ کی آڑ میں ’’انمول ملک‘‘مارکیٹ میں لانچ کردیا جائے گا۔حکومتی ادارے اس کے حق میں مہم چلائیں گے اور اسے صحت کیلئے انتہائی موذوں اور بیماریوں سے بچاؤ کیلئے مؤثرترین قرار دیا جائے گا۔

Related posts