کالعدم تنظیمیں فیصل آباد میں سرگرم‘ گلی محلوں تک کارروائیاں


فیصل آباد(عاطف چوہدری)فیصل آباد میں کالعدم تنظیموں کی موجودگی ‘ خفیہ ٹھکانوں اور گلی محلوں میں سرگرم ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ کالعدم تنظیموں کے کارکن گلی محلوں میں مختلف طرح کی کارروائیاں کرتے پائے جا رہے ہیں‘ شہر کے مختلف علاقوں میں بھاری اسلحے سمیت دندناتے پھرتے ہیں‘ گلی محلوں میں غنڈہ گردی کرتے اور بھتہ وصولی کرتے پائے جا رہے ہیں۔ فیصل آباد پولیس ان کے بارے میں معلومات ہونے اور تھانوں میں شکایات درج ہونے کے باوجود کارروائی کرنے سے گریزاں ہے۔نیوزلائن کے مطابق فیصل آباد میں کالعدم تنظیموں کے کارکنوں کی خفیہ اور اعلانیہ سرگرمیاں سامنے آئی ہیں۔ کالعدم تنظیموں کے کارکنوں کے گلی محلوں میں سرگرم ہو کر چندا مانگنے‘ غنڈہ گردی کرکے شریف شہریوں کو تنگ کرنے ‘ شہریوں کے لینے دینے کے تنازعات میں ریکوری ایجنٹ بن کر گن پوائنٹ پر وصولیاں کرنے ‘ بزنس مینوں کی ریکوریاں گن پوائنٹ پر اور غنڈہ گردی سے کرنے کی اطلاعات سامنے آئی ہیں۔رپورٹس میں سامنے آیا ہے کہ کالعدم تنظیموں کے کارندے گلی محلوں میں دندناتے پھرتے ہیں ۔ پولیس دفاتر اور تھانوں تک میں ان کی رسائی ہے۔ پولیس کے اندر تک کی خبریں اور اطلاعات انہیں حاصل اور غنڈہ گردی کی کارروائیوں میں پولیس کے اہلکار بھی ان کے مددگار ہوتے ہیں۔اسلحہ کے استعمال میں تربیت یافتہ ان کالعدم تنظیموں کی غنڈہ گردی کے سامنے عام شہری کچھ بھی نہیں کر پاتے جبکہ ان کا نیٹ ورک بھی ان کی امداد میں سرگرم پایا جاتا ہے ۔ کسی بھی قسم کی کارروائی میں کالعدم تنظیموں کا پورا نیٹ ورک اپنے کارندوں کا مددگار ثابت ہوتا ہے ۔ کھلے عام اسلحہ لے کر دندناتے پھرنے اور غنڈہ گردی کی کارروائیوں میں ملوث ہانے کے باوجود پولیس ان کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کرتی۔ کسی جگہ پولیس کی کارروائی میں پھنس جانے پر ’’اوپر‘‘ سے ان کے سفارشی فون پولیس کو بے بس کردیتے ہیں۔کالعدم تنظیموں کے کارندوں کی غنڈی گردی کی کارروائیوں سے عام آدمی شدید مشکلات کا شکار جبکہ کاروباری لین دین اور بھتہ وصولی میں ملوث ہونے سے بزنس کمیونٹی کے افراد شدید پریشانی کا شکار ہیں۔

Related posts