الیکشن قریب: پنجاب حکومت نے خزانوں کے منہ کھول دئیے


فیصل آباد (نیوزلائن)الیکشن قریب آتے ہی پنجاب حکومت نے خزانوں کے منہ کھول دئیے ہیں اور ترقیاتی منصوبوں پر بڑے پیمانے پر کام شروع کروا دیا گیا ہے ۔ اس کے ساتھ ہی کوشش کی جارہی ہے کہ وقت سے پہلے منصوبے مکمل کروا کر الیکشن میں ان کے کریڈٹ کیساتھ ووٹ مانگے جائیں۔میگا پراجیکٹس کا جائزہ لینے کیلئے ڈپٹی کمشنرسلمان غنی کی زیرصدارت خصوصی میٹنگ ہوئی۔اجلاس میں ڈپٹی ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ ڈاکٹر نوید‘ اسسٹنٹ کمشنر ( سٹی ) احمر سہیل کیفی ‘ محکمہ شاہرات کے ایکسئین عمیر لطیف ‘ رانا اظہر ‘ ڈائریکٹر نیسپاک امجد سعید ‘ ڈپٹی ڈائریکٹر ایف ڈی اے مہر ایوب ‘ سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر ظفر عباس ‘ میڈیکل سپرنٹنڈنٹ جنرل ہسپتال سمن آباد ڈاکٹر اسفند یار ‘ ایکسیئن میونسپل کارپوریشن خالد جاوید ‘ پبلک ہیلتھ انجینئرنگ اور دیگر متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی ۔اجلاس میں بتایا گیا کہ حکومت پنجاب کے ترقیاتی پروگرام کے تحت صوبائی ڈویلپمنٹ ورکنگ پارٹی نے ایک ارب 35 کروڑ روپے کی لاگت سے کینال روڈ کشمیر پل پر انڈر پاس کی تعمیر کے میگا پراجیکٹ کی منظوری دے دی ہے جس پر عملدرآمد کے لئے کنٹریکٹرز کی پری کوالیفکیشن کا عمل بھی مکمل ہو چکا ہے اور انتظامی منظوری کے بعد منصوبے پر عنقریب کام شروع ہو جائے گا ۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ 81 کروڑ گیارہ لاکھ روپے کی لاگت کے تخمینہ سے سمندری روڈ پر ناؤلٹی پل کے قریب یکطرفہ انڈر پاس کی تعمیر کے لئے فنانشیل بڈ 15 فروری کو کھولی جائے گی جبکہ کینال روڈ کے دونوں اطراف 34 کروڑ 69 لاکھ روپے کی لاگت سے سروس روڈ کی تعمیر کا پچاس فیصد سے زائد کام مکمل ہو چکا ہے اور یہ میگاپراجیکٹ مارچ کے آخر تک مکمل کر لیا جائے گا ۔ مزید برآں ایف ڈی اے کی زیر نگرانی ایف ڈی اے سٹی میں 50 کروڑ روپے کی لاگت سے سپورٹس کمپلیکس کی تعمیر کے لئے کنٹریکٹرز کی پری کوالیفکیشن مکمل ہو چکی ہے جبکہ 33 کروڑ روپے کی لاگت سے نڑ والا روڈ بائی پاس سے امین پور موٹر وے انٹر چینج تک دو رویہ سڑک کے منصوبے پر کام تیزی سے جاری ہے ۔ حکومت پنجاب کے ترقیاتی پروگرام کے تحت 36 کروڑ 94 لاکھ روپے کی لاگت سے 25 کلو میٹر ستیانہ جڑانوالہ روڈ ‘ 45 کروڑ روپے کی لاگت سے 24 کلو میٹر ستیانہ جھامرہ روڈ اور 18 کروڑ 32 لاکھ کے فنڈز سے کھرڑیانوالہ جڑانوالہ روڈ کی تعمیر پر بھی کام تیزی سے جاری ہے ۔ اجلاس کے دوران ڈیڑھ ارب روپے کی لاگت سے گورنمنٹ جنرل ہسپتال حسیب شہید کالونی ‘ ایک ارب روپے کے فنڈز سے گورنمنٹ جنرل ہسپتال سمن آباد کی 50 سے 250 بیڈز تک کی توسیع کے منصوبے اور چلڈرن ہسپتال میں جاری تعمیراتی کام کی رفتار کا جائزہ بھی لیا گیا ۔ اس موقع پر بتایا گیا کہ ضلع میں دو ارب 10 کروڑ روپے کی لاگت سے مختلف علاقوں میں سڑکوں کی تعمیر کی 137 سکیمیں مکمل کی جارہی ہیں جن کے لئے جاری کردہ فنڈز کا 80 فیصد خرچ ہو چکا ہے ۔ اجلاس کے دوران دیہی علاقوں میں پینے کے پانی کی فراہمی کے لئے پبلک ہیلتھ انجینئرنگ کی سکیموں کا جائزہ لینے کے علاوہ ستیانہ روڈ پر خانوآنہ کے قریب ماڈل قبرستان کی تکمیل کے بقیہ کام کا بھی جائزہ لیا گیا ۔ ڈپٹی کمشنر نے ان منصوبوں پر عملدرآمد کرنے والے محکموں سے کہا کہ وہ تعمیراتی رفتار کو مزید تیز کریں اور فنڈز کے شفاف استعمال کویقینی بنایا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ منصوبوں کی پائیدار تکمیل کے لئے تعمیراتی معیار کی مسلسل مانیٹرنگ کی جائے اور کسی قسم کی فنی یا انتظامی رکاوٹ کے بارے میں فوری آگاہ کریں تاکہ کوئی ترقیاتی سکیم التوا کا شکار نہ ہو۔

Related posts