ورکرز کا دھرنا‘ ڈی جی پی ایچ اے خوفزدہ ہوکر آفس سے بھاگ گئے


فیصل آباد(نیوزلائن) وکرز کے احتجاج اور دھرنے سے خوفزدہ ہو کر پی ایچ اے کے ڈی جی اور دیگر اہم افسران دفاتر چھوڑ کر بھاگ گئے۔افسران کی عدم موجودگی میں دفاتر میں کام مکمل طور پر ٹھپ رہا اور سارا دن واں ویرانی چھائی رہی۔نیوزلائن کے مطابق پی ایچ اے فیصل آباد کے ورکرز اپنے مطالبات کے حق میں احتجاج کررہے ہیں۔ورکرز نے پی ایچ اے آفس کے مین گیٹ کے سامنے دھرنا بھی دے رکھا ہے۔ احتجاج کرنے والے ملازمین کا مطالبہ ہے کہ ڈیلی ویجز اور کنٹرکٹ ملازمین کو مستقل کیا جائے۔ پی ایچ اے سے ایڈہاک ازم ختم اور ریٹائرڈ ہونے والے ملازمین کو گریجویٹی کی فوری فراہمی یقینی بنائی جائے۔ ڈی جی پی ایچ اے کی احتجاج کرنے والے ورکرز کیساتھ تلخ کلامی بھی ہوئی۔احتجاج کے پہلے روز ڈی جی کے ساتھ ورکرز نے انتہائی سخت اورتوہین آمیز رویہ بھی اختیار کئے رکھا۔اس حوالے سے ورکرز کا کہنا تھا کہ ڈی جی نے احتجاج کرنے والوں کیساتھ گالی گلوچ کی جس پر ورکرز مشتعل ہوئے۔ احتجاج سے خوفزدہ ڈی جی پی ایچ اے محمد آصف چوہدری اپنا آفس ہی چھوڑ گئے۔تمام دن آفس سے غائب رہے اور اپنے ایک دوست کے آفس میں چھپے بیٹھے رہے۔ ڈی جی کی دیکھا دیکھی پی ایچ اے کے ڈائریکٹرفنانس رانا غلام دستگیر اور دیگر افسران بھی دفاتر سے غائب رہے اور سارا دن اپنے دفاتر کو تالے لگوا کر خود ادھر ادھر چھپے بیٹھے رہے۔ افسران کے غائب ہونے کے باوجود ورکرز نے احتجاج اور دھرنا جاری رکھا جبکہ مطالبات کی منظوری تک احتجاج جاری رکھنے کے عام کا اعادہ کیا۔

Related posts