نیب نے نورالامین مینگل کیخلاف تحقیقات شروع کردیں


فیصل آباد(ندیم جاوید)قومی احتساب بیورو (نیب )نے فیصل آباد کے سابق ڈپٹی کمشنر و ڈی سی او نورالامین مینگل کیخلاف تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ احتساب بیورو نے نورالامین مینگل کے دور کے ترقیاتی کاموں کا ریکارڈ قبضے میں لینا شروع کردیا ہے ۔ مینگل کیخلاف کرپشن کی شکایات کا جائزہ لیا جارہا ہے اور بہت جلد ان سے باضابطہ تفتیش شروع کئے جانے کا بھی امکان ہے۔ نیوزلائن کے مطابق نیب سابق ڈپٹی کمشنر فیصل آباد نور الامین مینگل کیخلاف بڑے پیمانے پر تحقیقات شروع کر رکھی ہیں۔ نیب کی ایک خصوصی ٹیم نے نورالامین کے دور میں فیصل آباد میں ہونیوالے ترقیاتی کاموں کا ریکارڈ بھی قبضے میں لیا ہے۔ ذرائع کے مطابق کینال ایکسپریس وے‘ جھال چوک انڈر پاس و فلائی اوور ‘ چلڈرن ہسپتال اور متعدد دیگر منصوبوں میں کرپشن‘ بے ضابطگیوں ‘ بے قاعدگیوں کی شکایات سامنے آرہی تھیں اور ان منصوبوں میں نورالامین سمیت دیگر افراد کے ملوث ہونے کی بھی اطلاعات تھیں۔ نیب نے اس کا نوٹس لیتے ہوئے معاملے کی تحقیقات شروع کردی ہیں۔ فیصل آباد سے متعددترقیاتی منصوبوں کا ریکارڈ قبضے میں لے لیا گیا ہے اور ان کی انکوائری کی جارہی ہے۔ ذرائع کے مطابق نورالامین کو تحقیقات میں باقاعدہ شامل کیا جا سکتا ہے۔ ترقیاتی منصوبوں کے علاوہ بھی نورالامین کیخلاف بہت سی شکایات ہیں جن کا تحقیقاتی ٹیم جائزہ لے رہی ہے۔ نورالامین کیخلاف صرف فیصل آباد میں تعیناتی کی ہی شکایات نہیں ہیں۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی میں تعیناتی کے دوران بھی ان کیخلاف بہت سی شکایات ہیں نیب ٹیم ان کا بھی جائزہ لے رہی ہے۔

Related posts