قومی و صوبائی حلقوں کے نمبر تبدیل‘ صوبائی حلقہ بندیوں میں ردوبدل


فیصل آباد(احمد یٰسین)فیصل آباد شہر میں قومی اور صوبائی اسمبلی کے حلقوں کے نمبر کلاک وائز ہونے کی وجہ سے تمام حلقوں کی نمبر بدل دئیے گئے ہیں۔ قومی اسمبلی کی حلقہ بندیوں میں ردوبدل نہیں ہوا تاہم صوبائی اسمبلی کے حلقوں کی حلقہ بندیوں میں بھی ردوبدل کیا گیا ہے۔ الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جاری کردہ تفصیلات کے مطابق فیصل آباد شہر کے چار قومی اسمبلی کے حلقوں کی حلقہ بندیاں وہی رکھی گئی ہیں جو عارضی حلقہ بندیوں میں تھیں۔ حد بندیوں میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی۔
فیصل آباد شہر میں قومی اسمبلی کا پہلا حلقہ این اے 107ہی ہے مگر اب این اے 107غلام محمد آباد کی طرف والا حلقہ قرار پایا ہے۔اس میں زیادہ تر وہی علاقے شامل ہیں جوسابقہ این اے 85میں تھے۔عارضی حلقہ بندیوں میں اسے این اے 110قرار دیا گیا تھا مگر اب اس کا نمبر تبدیل کرکے این اے 107کر دیا گیا ہے۔
فیصل آباد شہر کا قومی اسمبلی کا دوسرا حلقہ این اے 108ہے جو سمن آباد سائیڈ کا حلقہ ہے۔ اس میں زیادہ تر وہی علاقے ہیں جو سابقہ این اے 84میں تھے۔عارضی حلقہ بندیوں میں اسے این اے 109قرار دیا گیا تھا مگر اب اس کا نمبر تبدیل کر کے این اے 108کر دیا گیا ہے۔
فیصل آباد شہر میں قومی اسمبلی کا تیسرا حلقہ این اے 109پیپلز کالونی اور مدینہ ٹاؤن سائیڈ کے علاقوں پر مشتمل ہے اور اس میں زیادہ تر وہی علاقے ہیں جو سابقہ این اے 83میں شامل تھے۔ عارضی حلقہ بندیوں میں اس کا نمبر 107رکھا گیا تھا مگر اب تبدیل کرکے این اے 109کر دیا گیا ہے۔
فیصل آباد شہر میں قومی اسمبلی کا چوتھا حلقہ این اے 110ہے ۔ اس میں زیادہ تر علاقے سابقہ این اے 82والے ہی ہیں۔ عارضی حلقہ بندیوں میں اسے این اے 108کہا گیا تھا مگر فائنل حلقہ بندیوں میں اس کا نمبر این اے 110کر دیا گیا ہے۔

فیصل آباد شہر میں صوبائی اسمبلی کے ساڑھے آٹھ حلقے بنائے گئے ہیں۔شہر کے جنوبی طرف کی چھے یونین کونسل دیہی حلقے پی پی 107کے ساتھ شامل کی گئی ہیں۔فائنل حلقہ بندیوں میں دو حلقوں کی حدود میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی باقی چھے صوبائی حلقوں میں کی حد بندی میں تبدیلی ہوئی ہے تاہم نمبر سب کے ہی تبدیل کرد ئیے گئے ہیں۔عارضی حلقہ بندیوں میں پی پی 110اور پی پی 111کی حد بندی میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی تاہم پی پی 110کو پی پی 117اور پی پی 111کو پی پی 116قرار دیدیا گیا ہے۔
فائنل حلقہ بندیوں میں فیصل آباد شہر کا صوبائی اسمبلی کا پہلا حلقہ پی پی 110ہی ہے۔مگر اب یہ غلام محمد آباد سائیڈ والے حلقے کو پی پی 110قرار دیا گیا ہے۔ عارضی حلقہ بندیوں میں اسے پی پی 116کہا گیا تھا۔ اس کا نمبر تبدیل کرنے کیساتھ اس کی حدود میں بھی اضافہ کیا گیا ہے۔ اس میں رضاآباد اور طارق روڈ تک کی چار یونین کونسل مزید شامل کی گئی ہیں جبکہ کوکیانوالہ سائیڈ کی دو یونین کونسل اس میں سے نکال دی گئی ہیں۔
فیصل آباد شہر کا صوبائی اسمبلی کا دوسرا حلقہ پی پی 111ہے ۔عارضی حلقہ بندیوں میں اسے پی پی 117کہا گیا تھا۔ اس میں سے رضاآباد سائیڈ کی چار یونین کونسل نکالی گئی ہیں جبکہ گھنٹہ گھر اور جھنگ بازار کی دو یونین کونسل اس کا حصہ بنا دی گئی ہیں۔ راجباہ روڈ کیساتھ پنج پیر ‘ لیاقت آباد ‘ لیاقت ٹاؤن‘ گلفشاں کالونی سائیڈ کی چار یونین کونسل بھی اس کا حصہ بنا دی گئی ہیں۔
فیصل آباد شہر کا صوبائی اسمبلی کا تیسرا حلقہ پی پی 112ہے ۔ عارضی حلقہ بندیوں میں اسے پی پی 115کہا گیا تھا ۔ اس کی حد بندی میں ردوبدل ہوا ہے۔ گھنٹہ گھر اور جھنگ بازار کی دو یونین کونسل اور پنج پیر سائیڈ کی چار یونین کانسل اس میں سے نکال دی گئی ہیں جبکہ کوکیانوالہ سائیڈ کی دو یونین کونسل اور رسالے والا روڈ کی دو یونین کونسل اس میں شامل کرکے اسے سرشمیر اورسمن آباد کی طرف ریلوے لائن تک وسعت دیدی گئی ہے۔
فیصل آباد شہر کا صوبائی اسمبلی کا چوتھا حلقہ پی پی 113ہے اسے عارضی حلقہ بندیوں میں پی پی 114کہا گیا تھا ۔ تاہم اس میں رسالے والا سائیڈ کی دو یونین کونسل نکال دی گئی ہیں جبکہ اس میں منڈی کوارٹر سے آگے کی دو مزید یونین کونسل شامل کی گئی ہیں ان کے علاوہ اس کی حدود کو ستیانہ روڈ تک بڑھاتے ہوئے فتح آباد‘ شریف پورہ کی دو مزید یونین کونسل اس میں شامل کردی گئی ہیں۔
فیصل آباد شہر کا صوبائی اسمبلی کا پانچواں حلقہ پی پی 114ہے۔ اسے سابقہ حلقہ بندیوں میں پی پی 113کہا گیا تھا تاہم اس کی حدود میں بھی ردوبدل کیا گیا ہے۔اس میں ستیانہ روڈ کی غربی طرف خانوآنہ کے قریب کی ایک یونین کونسل اور منڈی کوارٹر کے اوپر کے علاقے کی دو یونین کونسل نکال دی گئی ہیں جبکہ پیپلز کالونی ‘ فتح آباد‘ سائیڈ کی نہر کے ساتھ ساتھ والی تین یونین کونسل اور 224وزیر والی اور شادی پورہ سائیڈ کی دو یونین کونسل اس میں شامل کردی گئی ہیں۔
فیصل آباد شہر کا صوبائی اسمبلی چھٹا حلقہ پی پی 115ہے۔ عارضی حلقہ بندیوں میں اسے پی پی 112کہا گیا تھا۔ اس کی حدود میں بھی ردوبدل کیا گیا ہے۔ اس میں سے پیپلز کالونی اور فتح آباد سائیڈ کی نہر کے ساتھ ساتھ والی چار یونین کونسل نکال دی گئی ہیں جبکہ منصور آباد اور مہدی محلہ ‘ نشاط آباد سائیڈ کی چار یونین کونسل اس میں شامل کردی گئی ہیں۔
فیصل آباد شہر کا صوبائی اسمبلی کا ساتواں حلقہ پی پی 116ہے عارضی حلقہ بندیوں میں اسے پی پی 111کہا گیا تھا۔ یہ حاجی آباد اور شیخوپورہ روڈ کی غربی اور شمالی سائیڈ پر مشتمل علاقہ ہے ۔ فائنل حلقہ بندیوں میں اسی کی حدود نہیں بدلی گئیں۔
فیصل آباد شہر کا صوبائی اسمبلی کا آٹھواں حلقہ پی پی 117ہے عارضی حلقہ بندیوں میں اسے پی پی 110کہا گیا تھا۔ فائنل حلقہ بندیوں میں اس کی حدود بھی نہیں بدلی گئیں۔

Related posts