چار ماہ میں 58 ہزار کیسز کا فیصلہ کیا‘ سیشن جج فیصل آباد


فیصل آباد(نیوزلائن) ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج محمد عبدالناصر کا کہنا ہے کہ ضلعی عدلیہ نے چار ماہ میں 58 ہزار کیسز کا فیصلہ کیا جبکہ مرڈر ٹرائل میں 47 کیس نمٹائے چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کے اعزاز میں تاندلیانوالہ میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہوکلاء کی بھر پور معاونت کی بدولت کیسز تیز رفتاری سے حل ہورہے ہیں ۔اس موقع پر صدر تحصیل بار ایسوسی ایشن تاندلیانوالہ محمد افتخار امین واصل ایڈووکیٹ نے کہاکہ وکلاء عدلیہ کے شانہ بشانہ کام کرتے رہیں گے ۔ انہوں نے لائبریری کے لئے لاء کی کتابیں ‘ ایئر کنڈیشنڈ ‘ وکلاء کے لئے ڈسپنسری ‘ واٹر فلٹریشن پلانٹس ‘ تحصیل کچہری کی سڑکوں کی تعمیر و مرمت اور دیگر مسائل کی نشاندہی کی ۔ انہوں نے تقریب کے انعقاد کے سلسلے میں بھر پور تعاون پر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ‘ ڈپٹی کمشنر اور سی پی او کا بھی شکریہ ادا کیا ۔ صدر بار ایسوسی ایشن تحصیل سمندری چوہدری ارشد محمود وڑائچ نے خطاب میں کہا کہ چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس محمد یاور علی نے تقریب میں شرکت کرکے رونق بخشی ہے جس پر ان کے تہہ دل سے مشکور ہیں ۔

Related posts