شہباز حکومت نے افسران کوانعام میں بوگس چیک تھما دئیے


فیصل آباد (احمد یٰسین)میاں شہباز شریف کی حکومت نے پولیس افسران کو انعام میں بوگس چیک تھما دئیے۔ بنک میں جمع کروانے پر چیک ڈس آنر ہو کر واپس آگئے۔ پولیس افسران اس معاملے میں مخمصے کا شکار ہیں کہ ڈس آنر چیک پر شہباز شریف حکومت کے چیف ایگزیکٹو ’’خادم اعلیٰ میاں شہباز شریف ‘‘ اور چیک دینے والے آئی جی پنجاب کیخلاف بوگس چیک کا مقدمہ درج کروایا جائے یا نہیں۔نیوزلائن کے مطابق فیصل آباد پولیس کے متعدد افسران کو’’ اعلیٰ ‘‘کارکردگی پر میاں شہباز شریف کی حکومت نے ’’نقد ‘‘انعام کا اعلان کیا تھا۔ انعام دیتے وقت نقد کی بجائے چیک دئیے گئے ۔ پولیس افسران نے یہ چیک بنک میں جمع کروائے تو وہ کیش نہ ہوسکے اور بنک کی طرف سے چیک کیساتھ ڈس آنر کی سلپ لگ کر چیک واپس آگئے۔ قوانین کی رو سے بوگس چیک دینے پر زیر دفعہ 489ت پ کا مقدمہ درج کر لیا جاتا ہے۔ فیصل آباد میں روزانہ اس جرم میں درج ہونے مقدمات اس کی گواہی ہیں۔ مگر بوگس چیک جاری کرنے پر میاں شہباز شریف اور چیک دینے والے آئی جی پنجاب کیخلاف بوگس چیک کا مقدمہ درج کروانے کے حوالے سے پولیس افسران پس و پیش سے کام لے رہے ہیں۔اس صورتحال کا سامنا صرف پولیس افسران کو ہی نہیں ہے بلکہ فیصل آباد کے سٹی پولیس آفیسر اطہر اسماعیل کے طرف پولیس ملازمین کو دئیے گئے انعامی سرٹیفکیٹ کی رقم دینے سے اکاؤنٹ ڈیپارٹمنٹ انکاری ہے۔ مقررہ تاریخ گزرنے کے باوجود یہ انعامی سرٹیفکیٹ کی رقم ابھی تک پولیس ملازمین کو نہیں مل سکی۔

Related posts