پاکستان میں بریسٹ کینسر کی شرح ایشیا میں سب سے زیادہ

فیصل آباد (نیوزلائن)پاکستانی خواتین میں بریسٹ کینسر کی شرح تشویشناک حد تک بڑھ رہی ہے۔ہر آٹھ میں سے ایک پاکستانی خاتون کو اس مہلک مرض کے لاحق ہونے کا خدشہ ہے ۔ پاکستان کا شمار ان ایشیائی ممالک میں ہوتا ہے جہاں خواتین میں بریسٹ کینسر کی شرح سب سے زیا دہ ہے۔یہ کہنا ہے پینم ہسپتال کی آنکالو جسٹ ڈاکٹررفشاں صادق کا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے دی یونیورسٹی آف فیصل آباد کے ہیلتھ سائنسز کیمپس میںیونیورسٹی کی کمیونٹی سروسز سوسائٹی اور شعبہ کمیونٹی میڈیسن کے زیر اہتمام ’’ خواتین میں بریسٹ کینسرسے آگاہی ‘‘ کے موضوع پر سیمینار کے دوران کیا ۔ انہوں نے بتایا کہ اسکی بڑی وجوہات ہمارے ہاں اس مرض سے لاعلمی ، اس کو جان بوجھ کر نظر انداز کرنا،خوراک میں چکنائی والی غذاؤں کا زیادہ استعمال اور موٹاپا ہے۔ چالیس سال سے زائد عمر کی خواتین میں اس مرض کی شرح نسبتاً زیادہ ہے ۔ انہوں نے طالبات پر زور دیا کہ اس مہلک مرض کے بارے میں عام گھریلو خواتین میں شعور اجاگر کرنے کیلئے ہر ممکن سطح پر اپنا کردار ادا کریں۔ اس موقع پر کمیونٹی میڈیسن کے انچارج ڈاکٹر زاہد مسعود نے بریسٹ کینسر کی وجوہات ‘ علامات اور احتیاطی تدابیر کے حوالے سے معلومات فراہم کیں ۔اس موقع پر ایک آگاہی واک کا اہتمام بھی کیا گیا جس میں طالبات اور فیکلٹی ممبران کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

Related posts

Leave a Comment