پنجاب حکومت کا مصالحتی عدالتیں بنانے کا تجربہ فیصل آباد میں کامیاب


فیصل آباد(نیوزلائن) پنجاب حکومت کا مصالحتی عدالتیں بنانے کا تجربہ فیصل آباد میں کامیاب رہا۔ ایک مقامی جریدے کی رپورٹ میں سامنے آیا ہے کہ سیشن جج فیصل آباد کی نگرانی میں بنائے گئے فیصل آباد کے مصالحتی سنٹر نے صرف پانچ ماہ کے قلیل عرصہ میں 441 میں سے 369 معمولی نوعیت کے مقدمات کا فیصلہ سنا کر پنجاب بھر کے 36اضلاع میں اول پوزیشن حاصل کر لی۔لاہور ہائی کورٹ نے السٹرسینٹ ڈسپیوٹ ریزولوشن ایکٹ 2017ء کے تحت معمولی نوعیت کے کیسز جو کہ برسوں تک عدالتوں میں زیرسماعت رہتے تھے اور جن میں سائلان کا وقت اور پیسہ بھی ضائع ہوتا تھا کو نمٹانے کیلئے ضلعی سطح پر ماتحت عدلیہ کی نگرانی میں ’’مصالحتی سنٹر‘‘یکم جون 2017ء کو سیشن کورٹ میں قائم کیا جہاں دونوں فریقین مقدمہ نے باہمی رضا مندی سے فوجداری 168‘دیوانی 103‘فیملی 123‘گارڈین 24‘رینٹ 8‘اپیلز3اور بارہ متفرق نوعیت کے مقدمات فائل کئے جن میں سے فریقین مقدمہ کی عدم حاضری کے باعث 21کیسز واپس عدالتوں کو بھجوا دیئے گئے جبکہ 30 مقدمات پارٹیوں کی طرف سے اتفاق رائے نہ ہونے کی وجہ سے ناکامی سے دوچار ہوئے۔مصالحتی سنٹر میں 21مقدمات زیر کارروائی ہیں۔

Related posts

Leave a Comment