مارکیٹ میں سستے آٹے کیلئے فلور ملز کو گندم کوٹہ میں اضافے کا مطالبہ

فیصل آباد (نیوز لائن) فیصل آباد فلور ملز ایسوسی ایشن کے چیئرمین چوہدری شفیق انجم نے کہا ہے کہ شہریوں کو سستے آٹے کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے ضلعی انتظامیہ فلور ملز کو سرکاری گندم کی فراہمی کے کوٹے میں اضافہ کرے۔انہوں نے کہا ہے کہ اس وقت ضلع میں یومیہ 20کلو گرام والے 70سے 80ہزار تھیلوں کی ضرورت ہے جبکہ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے فلور ملز کو فراہم کی جانیوالی سرکاری گندم سے صرف 37ہزار تھیلے تیار ہو رہے ہیں۔ واضح رہے کہ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے فلو ر ملز کو 1375روپے فی من کے حساب سے گندم فراہم کی جا رہی ہے جس سے تیار ہونے والے 20کلو گرام تھیلے کا ایکس مل ریٹ 783روپے مقرر ہے جبکہ عام مارکیٹ میں گندم کی فی من قیمت 1950روپے تک پہنچ چکی ہے۔چوہدری شفیق کے مطابق ضلعی انتظامیہ نے گزشتہ ہفتے سے ہر فلور مل میں سرکاری گندم سے بننے والے آٹے کی چیکنگ کے لئے ایک فوڈ انسپکٹر، ایک پٹواری اور ایک یونین کونسل سیکرٹری تعینات کیا ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ سرکاری عملہ فلور ملز میں گندم کی آمد اور اس سے بننے والے آٹے کے تھیلوں کی مارکیٹ میں فراہمی کی نگرانی کر تا ہے تاہم دکاندار سرکاری آٹا فروخت کرنے کی بجائے گاہکوں کو یہ کہہ کر واپس بھیج دیتے ہیں کہ آٹا ختم ہو گیا ہے کیونکہ انہیں اس آٹے کا ایک تھیلہ فروخت ہونے پر دس سے پندرہ روپے کی بچت ہوتی ہے جبکہ فلور ملز کی طرف سے فروخت ہونے والے آٹے کو وہ من مانی قیمت پر فروخت کر کے فی تھیلہ 80سے100روپے بچا لیتے ہیں۔ چوہدری شفیق نے کہا کہ حکومت سرکاری نرخوں پر آٹے کی فروخت کو یقینی بنانا چاہتی ہے تو فلور ملز کی بجائے دکانداروں کی سطح پر قیمتوں کی مانیٹرنگ کا میکنزم بنائے۔

Related posts