زرعی یونیورسٹی فیصل آباد میں بریسٹ کینسر کے حوالے سے آگاہی سیمینار

فیصل آباد (نیوز لائن) زرعی یونیورسٹی فیصل آباد میں انسٹی ٹیوٹ آف ہوم سائنس کے زیراہتمام پنک اکتوبرکے حوالے سے خواتین میں چھاتی کے کینسرکی آگاہی کیلئے واک اور سیمینار کا انعقاد کیا گیا۔ یونیورسٹی کے وائس چانسلرپروفیسرڈاکٹر محمد اشرف (ہلال امتیاز) نے ڈین کلیہ فوڈ نیوٹریشن و ہوم سائنس ڈاکٹرمسعود صادق بٹ ‘ ڈاکٹر عائشہ ریاض‘ ڈاکٹر بینش اسرار‘ ڈاکٹر بینش سرور خاں ‘ مس صبا چوہدری‘ مس کرن و دیگر اساتذہ و طالبات کے ہمراہ واک کی قیادت کی۔ اس موقع پرشرکاءسے اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی میں پورا مہینہ پنک اکتوبر کے طو رپر منایا جا رہا ہے جس میں طالبات ‘ سٹاف اور اساتذہ میں چھاتی کے کینسر سے آگاہی مختلف پروگرامز منعقد کئے جا رہے ہیں۔ عالمی ادارہ صحت کے اعدادو شمار کا حوالہ دیتے ہوئے ڈاکٹر محمد اشرف نے بتایا کہ کینسر دنیا بھر میں شوگر‘ بلڈپریشر اور امراض قلب کے بعدانسانی موت کی بڑی وجہ بن چکا ہے اور ہر چھ میں سے ایک موت کینسر کی وجہ سے ہورہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ امسال اس آگاہی مہم کا سلوگن ”اپنے لئے پانچ منٹ نکالیں“ خواتین میں خاصا مقبول ہورہا ہے جس سے بریسٹ کینسرکی ابتدائی مرحلے میں ہی نشاندہی اور علاج کی راہ ہموار ہوگی۔ فیصل آباد میڈیکل یونیورسٹی میں فرانزک ڈیپارٹمنٹ کی ایسوسی ایٹ پروفیسر ای میڈ آرگنائزیشن کی سرگرم رہنماءڈاکٹر حمیرا ارشد نے سیمینار میں کلیدی مقرر کے طو رپر بتایا کہ ہرچند میڈیکل سائنس میں ابھی تک چھاتی کے کینسر کی کوئی بڑی وجہ سامنے نہیں آ سکی تاہم موروثی طور پر اس مرض کا شکار خواتین کی اگلی نسل یا چکن اور دوسری مرغن غذاءکا استعمال کرنے والی خواتین کے ساتھ ساتھ مانع حمل ادویات استعمال کرنیوالی خواتین میں بھی اس بیماری کی موجودگی کے امکانات نسبتاً زیادہ ہیں۔انہوں نے بتایا کہ ہر 8میں سے ایک خاتون میں چھاتی کا کینسرسامنے آنے کے امکانات موجود ہیں لیکن اس کی ابتدائی حالت میں تشخیص علاج کی کامیابی کے امکانات کو 90فیصد تک بڑھا دیتی ہے۔

Related posts