بلدیاتی اداروں کے ترقیاتی فنڈز استعمال کرنے کی نئی پالیسی جاری

فیصل آباد(نیوز لائن)پنجاب حکومت نے ضلع فیصل آباد کے بلدیاتی اداروں کے سوا سال سے منجمد2ارب63کروڑ98لاکھ55 ہزار کے ترقیاتی فنڈز استعمال کرنے کیلئے نئی پالیسی جاری کردی جسکے تحت میونسپل کارپوریشن‘میونسپل کمیٹی یا ضلع کونسل کے اکاؤنٹ میں 5کروڑ موجود ہونے کی صورت میں سو فیصد‘5 کروڑ سے زائد اور 10کروڑ سے کم موجود ہونے پر 5کروڑ اور دس کروڑ سے زائد موجود ہونے پر 50فیصد فنڈز استعمال کرسکتے ہیں جبکہ ان فنڈز کو واٹر سپلائی‘سیوریج‘ سٹریٹ لائٹس‘صفائی کے سامان کی خریداری‘مین ہول کے ڈھکن کی خریداری اور مرمت پر خرچ کئے جاسکتے ہیں جبکہ پالیسی کے تحت ضلع کی جس میونسپل کمیٹی کے اکاؤنٹ میں 5کروڑ سے کم فنڈز ہونگے اس کو باقی فنڈز حکومت مہیا کریگی اس سکیم کے تحت میونسپل کارپوریشن فیصل آباد ایک ارب4کروڑ 55 لاکھ اور ضلع کونسل ایک ارب26کروڑ56لاکھ کا 50 فیصد خرچ کرسکتے ہیں جبکہ میونسپل کمیٹی تاندلیانوالہ 3کروڑ17لاکھ28ہزار‘میونسپل کمیٹی جڑانوالہ کو3 کروڑ18 لاکھ 42ہزار‘میونسپل کمیٹی چک جھمرہ کو2کروڑ61لاکھ63ہزار اورمیونسپل کمیٹی ماموں کانجن کو ایک کروڑ73لاکھ 68 ہزار حکومت کی طرف سے مزید فراہم کئے جائیں گے حکومت کی طرف سے پابندی کے باعث ضلع فیصل آباد کے بلدیاتی اداروں کے اکاؤنٹس میں موجود ترقیاتی منصوبوں کے2ارب63کروڑ98 لاکھ55ہزار کے فنڈز سوا سال سے استعمال کرنے کی اجازت نہ ملنے سے شہریوں کو شدید مسائل کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

Related posts