ٹیکس چور’ نیب زدہ صنعتکار :عمران خان کے ”شیلٹرہوم ” منصوبہ کا پارٹنر

فیصل آباد(احمد یٰسین) وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے برخلاف کمشنر فیصل آباد نے تمام تر قواعدوضوابط کو نظر انداز کرتے ہوئے پراپرٹی فراڈ’ ٹیکس چوری’ کسانوں کے نادہندہ’ تعلیمی فراڈ میں ملوث اور نیب زدہ صنعتی امپائر ”مدینہ گروپ ”کو شیلٹر ہوم منصوبہ کا پارٹنر بنا لیا اور شہر کی پرائم لوکیشن پر غیرقانونی طریقے سے چار کنال اراضی بھی اس گروپ کو دینے کا حکم دیدیا ہے ۔نیو زلائن کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے اقتدار سے قبل اور بعد میں بھی ٹیکس چوروں’ پراپرٹی فراڈ’ قبضہ مافیا’ تعلیمی فراڈ مافیا’ کسانوں کو لوٹنے والوں کیخلاف ترجیحی اقدامات کرنے کا اعلان کیا ہے اور اس پر ہر صورت کاربند رہنے کا عزم ظاہر کررہے ہیں ۔ وزیر اعظم عمران خان کا بنیادی ویژن ہی محروم طبقات کو ریلیف دینا اور مافیاز کو کیفر کردار تک پہنچانا ہے مگر فیصل آباد میں عمران خان کے ویژن کے بالکل الٹ اقدامات کئے جانے کی رپورٹس سامنے آئی ہیں۔ عمران خان کے ویژن کے متضاد کام کرتے ہوئے کمشنر فیصل آباد محمود جاوید بھٹی نے مدینہ گروپ کو شیلٹر ہوم منصوبہ کا پارٹنر بنا لیا ہے۔ کمشنر فیصل آباد نے اس کیلئے مدینہ گروپ کو جنرل بس سٹینڈ میں شہر کی پرائم لوکیشن پر چار کنال اراضی بھی دینے کا حکم نامہ جاری کردیا ہے۔ شہر کی پرائم لوکیشن پرغیرقانونی طریقے سے مدینہ گروپ کو یک جنبش قلم دی جانیوالی 80مرلے جگہ کی قیمت 50کروڑ روپے سے زائد بتائی جارہی ہے۔ نیوز لائن کے حوالے سے رپورٹس سامنے آچکی ہیں کہ وہ ٹیکس چوریوں میں ملوث ہے۔ اس گروپ کے ڈائریکٹر کیخلاف خاتون کو نوکری کا جھانسہ دے کر زیادتی کا نشانہ بنانے کی اسلام آباد میں ایف آئی آر بھی درج ہوئی ۔ مدینہ گروپ پراپرٹی فراڈ میں بھی ملوث ہے۔ اس کا رہائشی منصوبہ ”یونیورسٹی ٹاؤن” ہنوز غیرقانونی ہے اور ایف ڈی اے اس کی خریدو فروخت پر پابندی لگا چکا ہے۔ یونیورسٹی ٹاؤن کے معاملہ کی نیب میں بھی انکوائری ہو رہی ہے ۔مدینہ گروپ کی یونیورسٹی آف فیصل آباد میں متعدد ایسے مضامین پڑھانے کی رپورٹس بھی سامنے آتی رہی ہیں جو ایچ ای سی سے منظور شدہ ہی نہیں تھے۔ یونیورسٹی کیخلاف ماضی میں متعدد مرتبہ طلبہ احتجاج بھی کر چکے ہیں۔یونیورسٹی کی تعمیرات بھی غیرقانونی بتائی جاتی ہیں جبکہ مدینہ گروہ کی مدینہ شوگر ملز کے ذمہ کسانوںکے گنے کے کروڑوں روپے کے واجبات ہیں جو ضلعی انتظامیہ کو نوٹس کے باوجود مدینہ گروپ ادائیگی سے گریزاں ہے۔ کمشنر فیصل آباد نے بھی مدینہ گروپ کے مالکان سے کسانوں کے کروڑوں روپے کے واجبات کی ادائیگی یقینی بنانے کی بجائے چند لاکھ کے منصوبے کیلئے اسے عمران خان کے شاندار منصوبے کا پارٹنر بنا دیا ہے اور کروڑوں روپے کی قیمتی سرکاری اراضی اس گروپ کے کنٹرول میں دینے کے احکامات جاری کردئیے ہیں۔ شیلٹر ہوم منصوبہ میں ہر طرح کے سوشل کرائم میں ملوث گروپ کو پارٹنر بنانے سے عمران خان کے ویژن کو بھی دھچکا لگا ہے جبکہ حکومتی معاملات کی شفافیت بھی مشکوک ہورہی ہے۔

Related posts